سیاسی جماعتوں سے افہام و تفہیم، کرپٹ عناصر سے کوئی رعایت نہیں ہو گی: چودھری نثار

سیاسی جماعتوں سے افہام و تفہیم، کرپٹ عناصر سے کوئی رعایت نہیں ہو گی: چودھری نثار

لاہور (سعید لودھی / رپورٹ: وقت نیوز) وفاقی وزیر داخلہ حودھری نثار علی خاں نے ایڈیٹر انچیف نوائے وقت گروپ ڈاکٹر مجید نظامی سے ملاقات کی۔ ملاقات میں ملکی سیاسی صورتحال سمیت دیگر امور پر تبادلہ خیال کیا گیا۔ چودھری نثار علی خاں نے کہا کہ نوائے وقت اور وقت نیوز کا کردار مثالی اور قابل تعریف ہے، اسی وجہ سے وہ مجید نظامی سے رہنمائی لینے کے لئے آئے ہیں۔ بعدازاں وقت نیوز سے خصوصی گفتگو کرتے ہوئے چودھری نثار علی خاں نے کہا کہ ملکی تاریخ میں کبھی نہیں ہوا کہ ایک جماعت نے حکومت سنبھالتے ہی بجٹ بنایا ہو، ہماری نئی حکومت کو ہر طرف سے معاشی اور مالی خسارہ، خالی خزانہ ملا جس کے باعث ہماری حکومت کو بجٹ بنانے میں شدید مشکلات کا سامنا کرنا پڑا۔ دراصل ہم تو گذشتہ حکومت کے تنکے چن رہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ بجٹ کے بعد مظاہرے ہو رہے ہیں لیکن چند دن میں ہی حکومت کے متعلق رائے قائم نہ کی جائے، یہ ناانصافی ہو گی، ابھی تو حکومت کی کارکردگی شروع بھی نہیں ہوئی پھر اس کے متعلق کوئی بھی رائے کیسے قائم کی جا سکتی ہے، ہم نے اس کے باوجود ہر قسم کا دبا¶ قبول کیا۔ انہوں نے یقین دلایا کہ حکومت کے اقدامات کے نتیجے میں یقیناً بہتری آئے گی، سیاسی جماعتوں کے ساتھ افہام و تفہیم کے ساتھ چلیں گے لیکن کرپٹ عناصر سے کوئی رعایت ہو گی اور نہ ہی کوئی سمجھوتہ۔ گورنروں کی تبدیلی کے سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ گورنروں کی تبدیلی کے حوالے سے پارٹی میں مشاورت جاری ہے اور نئے گورنرز بنانے کا فیصلہ چند روز میں ہو جائے گا۔ خطے کی صورتحال کے بارے میں اظہار خیال کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ امریکہ افغانستان سے نکلے گا تو پاکستان پر دبا¶ بڑھے گا، یہ جنگ پاکستان کی نہیں بلکہ ایک ڈکٹیٹر نے عالمی قوت کے ایک ٹیلی فون کال پر ملک کو اس جنگ میں جھونک دیا، اب اس خون کی ہولی کا سلسلہ بند ہونا چاہئے جس میں ہمارے جوانوں کی قیمتی جانیں گئیں، معاملات جنگ سے نہیں بلکہ مذاکرات سے طے ہوتے ہیں، ہم چاہتے ہیں کہ یہ مذاکرات آئین اور قانون کے دائرے میں ہونے چاہئیں۔
چودھری نثار