’’حرمین شریفین کی طرف اٹھنے والی ہر آواز دبا دی جائے‘‘ جماعت اہلحدیث کا سیمینار

لاہور (خصوصی نامہ نگار) جماعت اہلحدیث پاکستان کے زیر اہتمام ’’تحفظ حرمین شریفین سیمینار‘‘ جامعہ دارالقدس لاہور میں منعقد کیا گیا۔ جس کی صدارت امیر جماعت اہلحدیث حافظ عبدالغفار روپڑی نے کی جبکہ سیمینار میں مختلف مذہبی جماعتوں کے رہنمائوں نے کثیر تعداد میں شرکت کی۔ شرکاء سے مذہبی رہنما مولانا زبیر احمد ظہیر، مولانا ابتسام الٰہی ظہیر، مولانا عبدالوحید روپڑی، مولانا مفتی عبید اللہ عفیف، عبدالوہاب روپڑی، پروفیسر عبدالرحمن لدھیانوی، قاری یعقوب شیخ، ذوالفقار حجازی، مولانا شکیل الرحمن ناصر، مولانا شاہد محمود جانباز، مولانا سلمان عادل، قاری فیاض، مولانا عابد سلمان روپڑی اور دیگر قائدین نے خطاب کیا۔ مولانا عبدالغفار روپڑی نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ حرمین شریفین کا تحفظ مسلمانوں کے ایمان کا حصہ ہے۔ ایمانی غیرت کا تقاضا یہی ہے کہ حجاز مقدس اور حرمین شریفین کی طرف اٹھنے والی ہر آواز کو دبا دیا جائے۔ انہوں نے کہا کہ یمن کے معاملے پر پاکستان دوغلی پالیسی اختیار کرنے کی بجائے سعودی عرب کا کھلم کھلا ساتھ دینے کا اعلان کرے۔ ایران حوثی باغیوں کی پشت پناہی سے باز رہے۔ مولانا زبیر احمد ظہیر، مولانا ابتسام الٰہی ظہیر اور دیگر مقررین نے کہا کہ پاکستان کو ثالث بننے کا مشورہ دینے والے حقائق کو جھٹلا رہے ہیں۔ سعودی عرب نے ہمیشہ ہر مشکل وقت میں پاکستان کے ساتھ بے لوث دوستی کی ایسی تاریخ رقم کی جس کی مثال نہیں ملتی۔ حکومت پاکستان کو سعودی عرب سے ہر ممکن تعاون کرنا چاہیے۔ مولانا شکیل الرحمن ناصر، پروفیسر عبدالمجید، عبدالوہاب روپڑی، مولانا عبدالوحید روپڑی نے کہا کہ پاکستان کو نقصان پہنچانے والے آستین کے سانپ اسلام دشمنی کا ثبوت دینے سے باز رہیں۔ اسلام کے خلاف ہونے والی عالمی سازشوں کو جاننے کی ضرورت ہے۔ حوثی باغی عرب ممالک کے اندر اپنے غیر اخلاقی ہتھکنڈوں کو روکیں۔ مولانا شکیل الرحمن ناصر نے بتایا کہ ہر جمعۃ المبارک کو ’’یوم یکجہتی سعودی عرب‘‘ منایا جائے گا۔