مطالبات پورے نہ ہوئے تو 10 دن بعد جیل بھرو تحریک چلائیں گے: اشرف جلالی

مطالبات پورے نہ ہوئے تو 10 دن بعد جیل بھرو تحریک چلائیں گے: اشرف جلالی

لاہور (خصوصی نامہ نگار) تحریک لبیک یا رسولؐ اللہ کے مرکزی سربراہ ڈاکٹر اشرف آصف جلالی نے کہا کہ ہمارے مطالبات کو پورا کرنے کے لئے وفاقی حکومت کے پاس 10دن باقی رہ گئے اگر مطالبات پورے نہ ہوئے تو جیل بھرو تحریک چلائیں گے۔ ہمیں شوق نہیں، اسلام آباد کی طرف مارچ کریں۔ لگتا ہے حکومت راجہ ظفرالحق کی رپورٹ کو بھی چھپانا چاہتی ہے اور نئی کمیٹی بنا کر من پسند رپورٹ تیار کروانا چاہتی ہے۔ صوبائی وزیر قانون رانا ثنا کو عہدے سے برطرف کیا جائے۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے گزشتہ روز لاہور پریس کلب میں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ اس موقع پر الحاج پیر شفیق کیلانی، پیر خرم ریاض شاہ، مولانا مفتی عابد جلالی، علامہ عبدالرشید اویسی، صاحبزادہ امین نبیل سیالوی، صاحبزادہ سردار احمد رضا فاروقی، علامہ فرمان جلالی، صاحبزادہ مرتضی ہاشمی، علامہ فیاض وٹو، علامہ صدیق مصحفی جلالی، علامہ عبدالکریم جلالی ودیگر موجود تھے۔ پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے ڈاکٹر اشرف آصف جلالی نے کہا حکومت کو تحریک لبیک یا رسول اللہ کے ’’ختم نبوت دھرنے‘‘ کے منظور شدہ چھ مطالبات پر دئیے گئے ٹائم فریم کے مطابق عملدرآمد کرنا ہو گا، ہم اس سلسلہ میں کسی تاخیری حربے کو برداشت نہیں کریں گے۔ حکومت نے ہمارے بہت سے ضلعی قائدین اور کارکنان کو گرفتار کر لیا ہے گھروں میں چھاپوں کے دوران چادر اور چار دیواری کے تقدس کو پامال کیا گیا ہے اور علماء و مشائخ کی تذلیل کی گئی ہے ۔اگر حکومت ہمارے منظور شدہ مطالبات پر عملدرآمد سے بچنے کے لئے گرفتاریاں کر رہی ہے تو ہم جیل بھرو تحریک سے حکومت کا یہ شوق پورا کر دیں گے۔ اگر حکومت نے ڈنگ ٹپاؤ پالیسی اختیار کی تو ہم حکومت ہٹاؤ پالیسی کا اعلان کریں گے۔ ہمیں پی ٹی آئی اور پی پی پی والوں کے ایمان پر شک نہیں مگر 2 اکتوبر سے آج تک ان کی خاموشی نے انہیں خود ہی مشکوک بنا دیا ہے اگر انہیں تاجدار ختم نبوت کی خوشنودی سے زیادہ امریکا، برطانیہ کی خوشنودی عزیز ہے تو انہیں ذلت و رسوائی سے کوئی نہیں بچا سکتا۔ حزب اقتدار اور حزب اختلاف یاد رکھیں تاجدار ختم نبوت پہ کئی تاج وتخت نچھاور کئے جا سکتے ہیں۔ 27 نومبر کو ہری پور ہزارہ میں اور 28 نومبر کو پشاور میں تاجدار ختم نبوت کانفرنسیں منعقد کی جائیں گی نیز صوبہ سندھ، آزاد کشمیر، پنجاب، بلوچستان میں تاریخ ساز کانفرنسیں منعقد کی جائیں گی۔ 4 جنوری 2018 ء کو یوم عشق رسول کے موقع پر داتا دربار لاہور سے پنجاب اسمبلی تک سالانہ مارچ ہوگا جس میں لاکھوں لوگ شریک ہوں گے۔31 مارچ بروز ہفتہ 2018 ء کو سالانہ مرکزی عقیدہ توحید سیمینار اور تاجدار ختم نبوت کانفرنس کا لاہور میں انعقاد ہو گا۔ 

اشرف جلالی