شہبازشریف کا علمائ‘ سیاستدانوں‘ تاجر وں سمیت تمام طبقات کو اعتماد میں لینے کا فیصلہ

لاہور (خبر نگار خصوصی) وزیر اعلیٰ شہباز شریف نے صوبہ میں دہشت گردی کے خاتمے اور امن و امان کو یقینی بنانے کے لئے علمائ‘ سیاسی قائدین‘ تاجروں سمیت تمام طبقات کو اعتماد میں لینے کا فیصلہ کیا ہے۔ اس حوالہ سے دو تین روز میں مختلف مکاتب فکر کے علماء کا اجلاس بلایا جائے گا۔ پنجاب حکومت کے ذمہ دار ذرائع کے مطابق یہ فیصلہ وزیراعظم سے وزراء اعلیٰ کی ملاقات میں طے پانے والی حکمت عملی کے تحت کیا گیا ہے تاکہ امن و امان کے ذمہ دار اداروں کے ساتھ تمام طبقات بھی کردار ادا کریں۔ ذرائع کے مطابق وزیر اعلیٰ پنجاب نے امن و امان کے ذمہ دار اداروں کے حکام کو بھی انتباہ کیا ہے کہ وہ اپنے اداروں کو اصل مقاصد تک محدود رکھیں تاکہ امن و امان یقینی بنایا جا سکے۔ علاوہ ازیں گذشتہ روز شہباز شریف کی زیر صدارت پولیس کی تنخواہوں اور الائونسز میں اضافے کا جائزہ لینے کے لئے ایوان وزیر اعلیٰ میں اعلیٰ سطح اجلاس ہوا۔ جس میں وزیر قانون رانا ثناء اللہ خاں کی سربراہی میں قائم کمیٹی کی سفارشات کا تفصیلی جائزہ لیا گیا۔ اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے وزیر اعلیٰ نے کہا کہ عوام کی جان و مال کے تحفظ‘ امن عامہ کے قیام اور دہشت گردی کے خاتمے کے لئے پولیس کی کارکردگی میں اضافہ نہایت اہم ہے‘ اس مقصد کے لئے پولیس کی تربیت کو جدید خطوط پر استوار اور جدید آلات سے لیس کیا جا رہا ہے۔ انہوں نے کہا کہ ہمیں ملک کو آئندہ نسلوں کے لئے محفوظ بنانا ہے‘ جس کے لئے امن و امان اہم ترین تقاضا ہے۔ انہوں نے کہا کہ ہمیں وسائل کے اندر رہتے ہوئے اپنی ترجیحات کا تعین کرنا ہے اور موجودہ حالات میں امن و امان سے بڑھ کر اور کوئی ترجیح نہیں ہو سکتی۔ اس مقصد کے لئے جہاں سے بھی وسائل مہیا کرنے پڑے کریں گے۔ انہوں نے کہا کہ پولیس کا مورال بلند کرنے اور کارکردگی بہتر بنانے کے لئے وہ تنخواہوں میں اضافے سے اصولی طور پر متفق ہیں لیکن پولیس کو بھی کارکردگی دکھانا ہو گی۔ اسے تھانہ کلچر تبدیل کر کے عوام کی دادرسی اور جان و مال کے تحفظ کو یقینی بنانا ہو گا۔ اجلاس میں پولیس کے راشن‘ رسک اور ڈیلی الائونس فکس کرنے کا بھی جائزہ لیا گیا۔ اجلاس میں ذوالفقار کھوسہ‘ ارکان صوبائی اسمبلی اور پولیس حکام نے بھی شرکت کی۔بعدازاں کنگ ایڈورڈ میڈیکل یونیورسٹی کے متعلق ایک اہم اجلاس میں وزیراعلی پنجاب نے کہا کہ کے ای ایم یو کی موجودہ حیثیت برقرار رکھی جائے گی اور اسے بہترین میڈیکل یونیورسٹی بنایا جائے گا۔ انہوں نے ایک اعلی سطحی کمیٹی تشکیل دینے کی بھی ہدایت کی جو اسے دنیا کی اعلی معیار کی یونیورسٹی بنانے کے لئے اپنی سفارشات دو ہفتے میں پیش کرے گی۔ علاوہ ازیں شہباز شریف کوآرڈینیٹر تنویر عالم بٹ مرحوم کی رہائش گاہ امین پارک گئے اور اہل خانہ سے اظہار تعزیت کیا۔ انہوں نے مرحوم کے ایصال ثواب اور درجات کی بلندی کے لئے فاتحہ خوانی کی۔