سپریم کورٹ نے درباروں کو 24 گھنٹے کھلا رکھنے کیلئے دائر درخواست خارج کر دی

لاہور (وقائع نگار خصوصی) سپریم کورٹ نے درباروں کو 24 گھنٹے کھلا رکھنے کے لئے دائر درخواست خارج کر دی۔ سپریم کورٹ لاہور رجسٹری میں سپریم کورٹ کے مسٹر جسٹس میاں ثاقب نثار اور مسٹر جسٹس شیخ عظمت سعید پر مشتمل دو رکنی بینچ نے کیس کی سماعت کی۔ دوران سماعت عدالت کے روبرو درخواست گزار کے وکیل نے موقف اختیار کیا لاہور ہائیکورٹ نے تمام درباروں کو 24 گھنٹے کھلا رکھنے کا حکم دیا لیکن عمل درآمد نہیں ہوا جبکہ ہائیکورٹ نے عمل درآمد کے لئے دائر درخواست خارج کر دی ہے۔ درباروں پر شہری مذہبی عقیدت کی بنیاد پر جاتے ہیں لیکن حکومت نے درباروں کے لئے اوقات کار مقرر کر دیئے ہیں جس سے مسلمانوں کے مذہبی اور بنیادی حقوق متاثر ہوئے ہیں لہٰذا فاضل عدالت درباروں کو 24 گھنٹے کھلا رکھنے کا حکم دے۔ پنجاب حکومت کے وکیل نے بتایا سکیورٹی خدشات کے باعث درباروں کو 24 گھنٹے کھلا نہیں رکھ سکتے۔ درباروں پر دہشت گردی کے کئی واقعات ہوئے ہیں۔ فاضل عدالت نے فریقین کے دلائل سننے کے بعد درخواست خارج کر دی۔