جماعت اہلسنت کا ’’حفاظت دین‘‘ تحریک چلانے کا اعلان

لاہور (خصوصی نامہ نگار) جماعت اہل سُنّت نے ملک گیر’’حفاظت دین تحریک‘‘ چلانے کا اعلان کردیا۔ اگلا سیمینار 18مارچ کو ملتان میں ہوگا۔ درود و سلام پر پابندی ختم نہ ہوئی تو کراچی سے اسلام آباد تک ’’درود و سلام مارچ‘‘ کریں گے۔اس بات کا اعلان جماعت اہل سُنّت کے زیر اہتمام ایوان اقبال میں’’حفاظت دین سیمینار‘‘ میں کیا گیا۔ جس کی صدارت مشائخ کونسل کے سربراہ پیر سیّد منور حسین شاہ جماعتی نے کی جبکہ جماعت اہل سنت کے مرکزی ناظم اعلیٰ علامہ سیّد ریاض حسین شاہ ، سنی اتحاد کونسل کے چیئرمین صاحبزادہ حامد رضا، صاحبزادہ سیّد حامد سعید کاظمی ، جسٹس (ر) میاں نذیر اختر، جسٹس (ر) خواجہ محمد شریف، مفتی محمد اقبال چشتی، علامہ احمد علی قصوری، خواجہ غلام قطب الدین فریدی، پیر سیّد محمد حبیب عرفانی، پیر میاں ابوبکر، صاحبزادہ حمید جان سیفی، میاں محمد حنفی سیفی، پروفیسر عبد العزیز نیازی ،صاحبزادہ محب اللہ نوری، مفتی محمد صدیق ہزاری بھی موجود تھے۔ انہوں نے کہا کہپاکستان کو مولوی ، مدرسہ اور مسجد نہیں سیاستدانوں سے خطرہ ہے۔ جسٹس(ر) میاں نذیر اختر نے کہا کہ ممتاز قادری کو سزائے موت شریعت اور آئین کے منافی ہے۔ جسٹس (ر) خواجہ محمد شریف نے کہا کہ انتہا پسندوں کے گمراہ کن فلسفہ جہاد کے رد کے لیے حقیقی علماء میدان میں آئیں۔