بھابی کے جادو کرانے کا شبہ: لاہور میں بے اولاد تایا نے 3 کمسن بھتیجوں کو ذبح کر دیا

بھابی کے جادو کرانے کا شبہ: لاہور میں بے اولاد تایا نے 3 کمسن بھتیجوں کو ذبح کر دیا

لاہور+فیروز والا (سٹاف رپورٹر + خصوصی رپورٹر+ نامہ نگار ) شاہدرہ کے علاقہ میں تایا نے 3 ننھے سگے بھتیجوں کی گردنیں کاٹ کر انہیں بے دردی سے قتل کردیا جبکہ بچوں کو بچانے کیلئے آنیوالی ماں کو بھی چھری مار کر شدید زخمی کردیا ماں کو تشویشناک حالت میں ہسپتال داخل کروا دیا گیا۔ پولیس نے نعشیں پوسٹمارٹم کیلئے مردہ خانے بھجوا دیں جبکہ ملزم کو گرفتار کرکے آلہ قتل بھی برآمد کر لیا گیا۔ تایا کو شک تھا کہ اس کی بھابی اس پر جادو ٹونا کرواتی ہے جس کی وجہ سے 5 سال بعد بھی اس کے گھر اولاد نہیں ہوئی۔ پولیس کا کہنا ہے کہ درخواست ملنے پر فوری مقدمہ درج کیا جائے گا۔ زخمی خاتون کا بیان لے لیا گیا۔ واقعہ پر پورے علاقہ میں خوف و ہراس پھیل گیا۔ تفصیلات کے مطابق تھانہ شاہدرہ کے علاقہ فضل پارک نزد اچار والی فیکٹری بیگم کوٹ کے رہائشی فریاد اور اسکے بھائی مجید کی 5 سال قبل اکٹھے شادی ہوئی اور دونوں ایک ساتھ رہتے تھے چھوٹا بھائی مجید بھٹے پر محنت مزدوری کرتا ہے اور اس کے 3 بیٹے تھے جن میں 4 سالہ وسیم، 3 سالہ عظیم اور ڈیڑھ سالہ شکیل شامل تھے جبکہ بڑے بھائی فریاد کی کوئی اولاد نہیں تھی اور 2 سال قبل اس کی بیوی بھی اسے چھوڑ کر چلی گئی تھی اولاد نہ ہونے اور بیوی کے چھوڑ جانے کا فریاد کوشدید رنج تھا اور اس کے خیال میں اس کی بھابھی سلمہ اس پرجادو ٹونا کرواتی تھی گزشتہ روز مجید کام پر تھا اسی دوران فریاد بڑی چھری لیکر اس کے گھر پہنچ گیا اور اس کے تینوں بیٹوں 4 سالہ وسیم، 3 سالہ عظیم اور ڈیڑھ سالہ شکیل کے گلے کاٹ کر انہیں قتل کردیا اسی دوران بچوں کی ماں نے بچوں کو بچانے کی کوشش کی تو فریاد نے بھابھی سلمہ کو بھی چھری مار کر شدید زخمی کردیا۔ وزیراعلی پنجاب نے افسوسناک واقعہ کی رپورٹ طلب کر لی ہے۔ شہباز شریف نے سوگوار خاندان سے اظہار ہمدردی کیا ہے۔فیروزوالا سے نامہ نگار کے مطابق دونوں بھائیوں کی شادی ایک ہی گھر میں ہوئی تھی اولاد نہ ہونے پر اکثر دونوں بھائیوں اور ان کی بیویوں میں لڑائی جھگڑا رہتا تھا۔ زخمی سلمیٰ بی بی کی حالت نازک ہے۔