قرآن کو چھوڑنے کی وجہ سے ملک بحرانوں کا شکار ہے: جے یو آئی

لاہور (خصوصی نامہ نگار)قرآن اور سنت کے نا م پر بننے والے ملک میں نظام مصطفی ﷺ نافذ نہ ہونے کے باعث ملک بحرانوں کا شکار ہورہا ہے ہر روز نئے سے نیا بحران جنم لے رہا ہے ہر طرف بے شمار مسائل ہیں اور حالات بد سے بدترین ہو تے جارہے ہیں ان خیالات کا اظہار جے یو آئی کے مر کزی سیکرٹری اطلاعات مو لا نا محمد امجد خان ،مو لا نا نعیم الدین ،مو لا نا ظہیرشاہ،مو لا نا قاری مو من شاہ ،مو لا نا عبداللہ یا سر ، مو لا نا عبد الرشید ہا شمی ،مو لا نا بشیر ،قاری عبدالقیوم،حا فظ عبد القدوس محسن اور دیگر نے جا معتہ الازھر بادامی باغ میں تقسیم اسناد کی تقریب سے خطاب کر تے ہو ئے کیا ۔مو لا نا نعیم الدین ، مو لا نا ظہیر شاہ ،مو لا نا محمد امجد خان اور دیگر نے کہا کہ ماضی قریب میں صبح قرآن مجید کی تلاوت ہوتی تھی جس کی وجہ سے اللہ کی رحمتیں اتر تی تھیں لیکن آج معاملہ اس کے بر عکس ہے اسی لیے رب کائنات کی رحمتیں اتر نا بند ہو گئی ہیں انھوں نے کہا کہ نو جوان نسل کی تر بیت کی ازحد ضرورت ہے ہر طرف فحاشی اور عریانی کے دروازے کھول دیئے گئے ہیں ،انھوں نے کہا کہ نئی نسل کو اسلام کا پیغام ادب واخترام وبرداشت وایثار عام کر نے کی ضروت ہے علما ءنے کہا کہ نبی اکرم ﷺ کی سنتوں پرعمل کر نے اور انھیں عام کر نے پر رب کی رضا حاصل ہو گی انھوں نے کہا کہ ہمارے مسائل کا حل قرآن وسنت کو اپنانے میں ہے ،انھوں نے کہا کہ نظام مصطفی سے دوری کی وجہ سے ملک مسائلستان بن گیا ہے۔