’’دلیل کیساتھ قادیانیوں کا علمی تعاقب پوری دنیا میں جاری رکھیں گے‘‘

 لاہور (خصوصی نامہ نگار) عالمی مجلس تحفظ ختم نبوت کانفرنس کے زیراہتمام 29 ویں سالانہ ختم نبوت کانفرنس برمنگھم/برطانیہ کی مرکزی جامع مسجد میں منعقد ہوئی۔ کانفرنس سے عالمی مجلس تحفظ ختم نبوت کے نائب امیر مولانا ڈاکٹر عبدالرزاق سکندر نے خطاب کرتے ہوئے کہا دلیل کے ساتھ قادیانیوں کا علمی تعاقب پوری دنیا میں کرتے ہوئے ان کے کفر کو بے نقاب اور نسل نو کے ایمان کی حفاظت کا فریضہ سرانجام دیتے رہیں گے۔ مولانا اللہ وسایا نے ختم نبوت کا عقیدہ اساسی حیثیت رکھتا ہے جس پر ہر مسلمان کا ایمان ہے اس پر ایمان لانا اتنا ہی ضروری ہے جتنا توحید، رسالت اور آخرت پر ایمان ضروری ہے۔ صاحبزادہ مولانا عزیز احمد نے کہا کہ امت مسلمہ ہر بات برداشت کر سکتی ہے لیکن حضور اکرمؐ کی شان اقدس میں ادنیٰ گستاخی برداشت نہیں کر سکتی۔ متحدہ علماء بورڈ حکومت پنجاب کے چیئرمین مولانا حافظ  فضل الرحیم اشرفی نے کہا کہ عقیدہ ختم نبوت کے تحفظ ہر مسلمان کے ایمان کا تقاضہ، دنیا میں کامیابی، آخرت میں نجات اور حضورؐ کی شفاعت کا ذریعہ ہے۔ حافظ حسین احمد نے کہا کہ 7 ستمبر صرف ہم پاکستانیوں کیلئے ہی نہیں بلکہ پوری امت مسلمہ کیلئے انتہائی اہمیت کا حامل تاریخی دن ہے۔ علامہ ڈاکٹر خالد محمود نے کہا کہ پاکستان اسلام کے نام پر بنا اور پاکستان کی اسلامی حیثیت بنانے اور برقرار رکھنے میں علماء دیوبند کا بڑا حصہ ہے۔ مولانا عبدالغفور حیدری نے کہا کہ قادیانی روز اول سے مسلمان نہیں۔ کانفرنس سے صاحبزادہ سعید احمد، صاحبزادہ نجیب احمد، مولانا مفتی خالد محمود، مولانا فاروق سلطان، مفتی محمودالحسن، حافظ نگین احمد، مولانا عبدالھادی، مولانا فاروق علوی، مولانا محمد احمد، مولانا غلام ربانی افغانی اور دیگر نے بھی خطاب کیا۔