نواز، شہباز شریف اور 5 وفاقی وزرا کو کام سے روکنے کیلئے سپریم کورٹ میں درخواست دائر

لاہور(وقائع نگار خصوصی) عام انتخابات میں مبینہ دھاندلی کی تحقیقات، قومی اور صوبائی اسمبلیوں کی تحلیل، جوڈیشل کمیشن کی تشکیل، اس کارروائی کے دوران وزیراعظم نواز شریف، وزیراعلیٰ شہباز شریف اور پانچ وفاقی وزراء کو کام کرنے سے روکنے کے لئے سپریم کورٹ کی لاہور رجسٹری میں آئینی درخواست دائر کر دی گئی۔ ایم شاہد رانا ایڈووکیٹ کی طرف سے دائر کردہ آئینی درخواست میں موقف اختیار کیا ہے کہ گزشتہ برس ہونے والے عام انتخابات میں وسیع پیمانے پر دھاندلی کے الزامات لگائے جا رہے ہیں جس کی تحقیقات ضروری ہے۔ انتخابی دھاندلیوں کی تحقیقات کیلئے سپریم کورٹ کے تین ججز پر مشتمل جوڈیشل کمیشن تشکیل دیا جائے، کمشن کی کارروائی کے دوران وزیر اعظم نواز شریف اور وزیر اعلی شہباز شریف کو کام کرنے سے روکا جائے۔ سانحہ ماڈل ٹائون کے مقدمے میں نامزد ملزم وزیر اعظم نواز شریف، وزیراعلیٰ شہباز شریف، رکن اسمبلی حمزہ شہباز، وزیر اطلاعات، پرویز رشید، وزیر دفاع خواجہ آصف، وزیر ریلوے خواجہ سعد رفیق، وزیر مملکت عابد شیر علی اور سابق صوبائی وزیر قانون رانا ثناء اللہ کو مقدمہ کی حتمی تفتیش تک کام کرنے سے روکا جائے۔ اگر جوڈیشل کمیشن کی تحقیقات کے دوران انتخابات میں دھاندلی ثابت ہوجائے تو نگران حکومت تشکیل دے کر نئے انتخابات کرائے جائیں۔