بھارت کی آبی دہشت گردی پسندیدہ قرار دینے کی کوشش کرنیوالوں کے منہ پر طمانچہ ہے: سراج الحق

بھارت کی آبی دہشت گردی پسندیدہ قرار دینے کی کوشش کرنیوالوں کے منہ پر طمانچہ ہے: سراج الحق

لاہور+ جھنگ (خصوصی نامہ نگار+ نامہ نگار) امیر جماعت اسلامی سراج الحق نے کہا ہے کہ بھارت نے پاکستان میں پانی چھوڑ کر آبی دہشتگردی کی ہے، آبی دہشت گردی بھارت کو پسندیدہ ملک قرار دینے کی کوشش کرنے والوں کے منہ پر طمانچہ ہے، بھارت کو تباہی و بربادی کا حساب دینا پڑے گا، یہ وقت سیاست کا نہیں بلکہ سیلاب زدگان کی مدد کرنے کا ہے، قوم متحد ہو کر مصیبت زدہ بھائیوں کی مدد کرے۔ صدر، وزیراعظم سمیت پوری قوم اجتماعی توبہ کرے، سیلاب اللہ تعالیٰ کی ناراضی کی وجہ ہے جس ملک میں سودی نظام اور شراب کی فروخت کی اجازت ہو وہاں مصیبت نہیں آئے گی تو اور کیا ہوگا، 68 سال سے ایک گھنٹے کے لئے بھی ملک میں اللہ کا نظام نافذ نہیں کیا گیا، حکومتوں کی نااہلی کا نتیجہ عوام اپنی تباہی کی صورت میں بھگت رہے ہیں۔ جھنگ سے نامہ نگار کے مطابق سراج الحق نے علی آباد بائی پاس، سرگودھا روڈ حفاظتی بند کا دورہ بھی کیا۔ علی آباد کے قریب سیلاب زدگا ن  سے خطاب میں کہا مجھے افسوس ہے کہ بھارت نے ہم پر پانی چھوڑا ہے۔ ہم پر یہ پانچواں حملہ ہے پانی چھوڑنے کی شکل میں۔ حکومت وقت کا یہ فرض ہے کہ پنجاب کی تباہی، بربادی ، غریبوں اور مظلوموں کا کیس بین الاقوامی عدالت میں لڑے۔ سیلاب زدگان سے ممبر صوبائی اسمبلی ڈاکٹر سید وسیم اختر، مولانا احمد لدھیانوی، ڈاکٹر عبدالجبار نے بھی خطاب کیا۔ اس موقع پر بہادر خان جھگڑ ، میجر سرور اور صاحبزادہ سلطان فیاض الحسن کے علاوہ جماعت اسلامی کے تمام منتظمین اور ورکرز کی کثیر تعداد موجود تھی۔