قاری غلام رسول دارالقرآن گارڈن ٹائون میں سپردخاک، نماز جنازہ میں ہزاروں افراد کی شرکت

لاہور (خصوصی نامہ نگار) ممتاز عالم دین زینت القراء اُستاذ القراء مولانا قاری غلام رسول کی نماز جنازہ آج برکت مارکیٹ گرائونڈ گارڈن ٹائون میں ادا کی گئی۔ ان کی نماز جنازہ میں ہزاروں کی تعداد میں علماء و مشائخ کے علاوہ زندگی کے ہر شعبہ سے تعلق رکھنے والے ہزاروں افراد نے شرکت کی۔ نماز جنازہ میں شاہ اویس نورانی، صاحبزادہ مبشر رسول، صاحبزادہ مدثر رسول، پیر اعجاز ہاشمی، مفتی محمد خان قادری، قاری زوار بہادر، حافظ عبدالستار سعیدی، عطاء محمد مانیکا وزیر اوقاف، ڈاکٹر اشرف آصف جلالی، مفتی عبدالعلیم سیالوی، مفتی گل احمد عتیقی، مولانا غلام نصیر الدین سعیدی، علامہ خادم حسین رضوی، مولانا نصیر احمد شرقپوری، ڈاکٹر راغب حسین نعیمی، پیر میاں محمد حنفی سیفی، ڈاکٹر سلمان قادری، جسٹس (ر) نذیر غازی، مولانا قاسم علوی، قاری اللہ بخش ورک، مولانا رمضان سیالوی، پیر قاری مشتاق احمد، پروفیسر رائو ارتضیٰ حسین اشرفی، قاضی محمد طیب فاروقی، قاری محمد اکرم فیضی، دعوت اسلامی کے حاجی یعفور عطاری، مولانا حافظ محمد اکبر، حافظ نصیر احمد نورانی، مولانا احمد علی قصوری، مفتی تصدق حسین، مولانا شبیر حسین فریدی، مولانا سعید احمد نعیم، مولانا سید منور حسین شاہ، مولانا افتخار سیالوی، مولانا اصغر شاکر کے علاوہ دیگر علماء و مشائخ، حفاظ اور قراء نے شرکت کی۔ اس موقع پر قاری غلام رسول کو خراج تحسین پیش کرتے ہوئے مولانا حافظ عبدالستار سعیدی، شاہ اویس نورانی، قاری زوار بہادر، ڈاکٹر اشرف آصف جلالی، مولانا منیر احمد یوسفی اور دیگر مقررین نے کہا قاری غلام رسول نے نصف صدی سے زائد قرآن پاک کے ذریعے تبلیغ اسلام کی۔ ان کی مسحور کن آواز میں تلاوت قرآن پاک سن کر سینکڑوں غیر مسلم مشرف بہ اسلام ہوئے۔ مقررین نے کہا قاری غلام رسول کا شمار دنیا کے اُن چند افراد میں ہوتا ہے جنہوں نے رسول اللہ ﷺ کے دین کی ترویج و اشاعت کیلئے ملک و بیرون ملک امریکہ، کینیڈا، جاپان سمیت مساجد اور مدارس قائم کئے۔ قاری غلام رسول کو ان کے قائم کردہ ادارے دارالقرآن گارڈن ٹائون کے صحن میںسپرد خاک کر دیا گیا۔ ان کے ایصال ثواب کے لئے ختم قل کی محفل (11 مارچ) بعد از نماز ظہر دارالقرآن نیو گارڈن ٹائون میں منعقد ہو گی۔