وزیرستان کے آئی ڈی پیز کو 16 کروڑ روپے امداد دی جائیگی: سفیر ڈنمارک

لاہور (نیوز رپورٹر) ڈنمارک کے پاکستان میں سفیر جسپرایم سورنسن نے کہاہے کہ ڈنمارک کے سرمایہ کار پاکستان میں توانائی کے بحران اور فارماسوٹیکل کے شعبہ سمیت دیگر شعبہ جات میں سرمایہ کاری میں دلچسپی رکھتے ہیں، ترقیاتی منصوبوںکی مد میں ڈنمارک حکومت پاکستان میں مختلف ترقیاتی منصوبوں کے لئے بھی پانچ کروڑ ڈالرخرچ کر رہی ہے جبکہ وزیرستان سے بے گھر ہو کر آنے والے آئی ڈی پیز کے مسائل کے حل کیلئے تقریباً 16کروڑ روپے کی امداد فراہم کی جا رہی ہے جس سے آئی ڈی پیز کی خیمہ بستیاں قائم کی جائیں گی جس سے انھیں سردیوں میں گرم کپڑے اور دیگر سہولتیں بھی فراہم کی جائیں گی۔ وہ لاہور پریس کلب کے پروگرام میٹ دی پریس میں میڈیا سے گفتگو کر رہے تھے۔ اس موقع پر لاہور پریس کلب کے صدر ارشد انصاری، نائب صدر ندیم بسرا اور سیکرٹری افضال طالب، صابر سعید شاہ، حامد ولید اور ذوالفقار علی مہتو نے معزز مہمان کو خو ش آمدید کہا۔ ان کا کہنا تھا کہ ڈنمارک میں ہوا (ونڈ) کے ذریعے سستی ترین بجلی پیدا کی جا رہی ہے جو کہ وہاں کی پیداوا رکی 42 فیصد ہے جبکہ پاکستان کی بھی ساحلی پٹی پر ہوا (ونڈ) کے ذریعے 50 ہزار میگاواٹ بجلی پیدا کی جا سکتی ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ ڈنمارک کے عوام پاکستان میں جنس کی بنیاد پر خواتین کو برابری کے مواقع دینے میں بھی دلچسپی رکھتے ہیں جبکہ دیگر انسانی حقوق کے حوالے سے مسائل کا خاتمہ ہمارے ایجنڈے کا حصہ ہے، صحافیوں کی تربیت اورکیپسٹی بلڈنگ کے حوالے سے بھی ڈنمارک حکومت میڈیا سپورٹ پروگرام شروع کر رہی ہے۔ انھوںنے کہاکہ پاکستان اس وقت دہشت گردی کا شکار سب سے بڑا ملک ہے جبکہ ڈنمارک کی حکومت اور عوام سانحہ پشاور سمیت دہشت گردی کے تمام واقعات کی مذمت کرتی ہے۔ انہوںنے کہاکہ ہمیں دنیا سے دہشت گردی ختم کرنی ہے اوراس مقصد کے لئے ہم ایک بہتر پاکستانی معاشرے کے قیام کے لئے یہاں تعلیم کے فروغ میں نہ صرف گہری دلچسپی رکھتے ہیں بلکہ پاکستانی شہریوں کو اچھی صحت کی سہولتوں کی فراہمی میں بھی اپنا بھرپور کردار ادا کرنا چاہتے ہیں۔ میٹ دی پریس پروگرام میں عہدیداروں نے معزز مہمان کو کلب کی جانب سے شیلڈ اور پھول پیش کئے۔
ڈنمارک کا اعلان