انسانی حقوق کا عالمی دن منایا گیا، لاہور میں سیمینار نیلسن منڈیلا کے نام موسوم

انسانی حقوق کا عالمی دن منایا گیا،  لاہور میں سیمینار نیلسن منڈیلا کے نام موسوم

لاہور + اسلام آباد (لیڈی رپورٹر +  آئی این پی) پاکستان سمیت دنیا بھر میں گذشتہ روز انسانی حقوق کا عالمی دن منایاگیا۔ اس موقع پر صوبائی دارالحکومت میں مختلف تقریبات منعقد ہوئیں  اور سیمینارز کا اہتمام  کیا گیا۔ انسانی حقوق کی تنظیم سائوتھ ایشیا پارٹنرشپ۔ پاکستان کی آواز اور جوابدہی پروگرام کے زیراہتمام سانجھ ویہار میلہ منعقد کیا گیا۔ مقررین میں نظریہ پاکستان ٹرسٹ شعبہ خواتین کی کنوینر مہناز رفیع، مسلم لیگ (ن) کی رکن پنجاب اسمبلی شمیلہ اسلم، سائوتھ ایشیا پارٹنرشپ پاکستان کے ایگزیکٹو ڈائریکٹر محمد تحسین، ڈ پٹی ڈائریکڑ عرفان مفتی و دیگر شامل تھے۔ مقررین نے اس بات پر افسوس کا اظہار کیا کہ ریاستیں اور حکومتیں اپنے شہریوں کے انسانی حقوق پامال کرتی ہیں اور دنیا میں  جنگوں سے جو تباہی و بربادی ہو رہی ہے اسکی وجہ بھی یہی ہے کہ انسانوں کو انکے بنیادی حقوق میسر نہیں ہیں۔ عالمی دن کے موقع پر لاہور پریس کلب میں سول سوسائٹی نیٹ ورک اور امیدِ سحرفاؤنڈیشن کے زیراہتمام منعقدہ سیمینار کو عظیم رہنما نیلسن منڈیلا کے نام موسوم کیاگیا۔  عبداللہ ملک،  اعجازچودھری، آمنہ الفت، شہنیلاروتھ  اور دیگر شامل تھے۔ اس موقع پر نیلسن منڈیلا کوخراج تحسین پیش کرنے کیلئے غبارے چھوڑے گئے اور انکی قدِ آدم تصویر کے سامنے شمعیں روشن کی گئیں۔ گورنمنٹ کالج یونیورسٹی لاہور میں راوینز لاء سوسائٹی کے زیراہتمام منعقدہ سیمینار سے صوبائی سیکرٹری قانون سید ابوالحسن نجمی اور  ڈاکٹر خالد منظور بٹ نے خطاب کیا۔  آئی این پی کے مطابق لاپتہ افراد کیس  کا فیصلہ سناتے    وقت سپریم کورٹ  کے جسٹس جواد  ایس خواجہ نے کہا کہ عجیب  اتفاق ہے کہ انسانی حقوق کا عالمی دن  منایا جا رہا ہے اور سپریم کورٹ  نے لاپتہ افراد کیس  کا فیصلہ سنا دیا ہے۔  اب ہر چیز آئین اور قانون  کے مطابق چلے گی،  انسانی حقوق  کی خلاف ورزی  برداشت نہیں کی جائیگی۔