وفاقی سیکرٹری مذہبی امور حج پالیسی پر اعتراضات کا 3 دن میں فیصلہ کریں: لاہور ہائیکورٹ

لاہور (وقائع نگار خصوصی) لاہور ہائیکورٹ نے حج پالیسی 2014ء کالعدم قرار دینے کے لئے دائر درخواستوں کا فیصلہ سناتے ہوئے وفاقی سیکرٹری مذہبی امور کو درخواست گذاروں کی طرف سے داخل اعتراضات کا تین دن میں فیصلہ کر کے عدالت میں رپورٹ پیش کرنے کا حکم دے دیا۔ لاہور ہائیکورٹ کے مسٹر جسٹس خالد محمود خان نے درخواست گزاروں کو وفاقی سیکرٹری مذہبی امور سے رجوع کرنے کی ہدایت کی۔ درخواست گزاروں کے وکیل کی جانب سے موقف اختیار کیا گیا تھا کہ حج اسلامی شعائر ہے مگر اسے کاروبار بنا لیا گیا ہے، موجودہ حج پالیسی سپریم کورٹ کے احکامات سے ہٹ کر بنائی گئی ہے اور اس پالیسی کے تحت پرانے حج ٹورآپریٹرز کو حج کا کاروبار کرنے اور عازمین حج کو لوٹنے کی پوری آزادی دے دی گئی۔ انہوں نے کہا کہ بدنیتی پر مبنی حج پالیسی جان بوجھ کر تاخیر سے بنائی گئی تاکہ حج آپریشن کو تاخیر سے شروع کیا جائے اور اسے عدلیہ میں چیلنج نہ کیا جا سکے۔