انقلاب کیلئے روزانہ مشاورت ہو رہی ہے، شہادت کو پانی کا گھونٹ پینا سمجھتا ہوں: طاہر القادری

انقلاب کیلئے روزانہ مشاورت ہو رہی ہے، شہادت کو پانی کا گھونٹ پینا سمجھتا ہوں: طاہر القادری

لاہور ( خصوصی نامہ نگار) عوامی تحریک کے قائد ڈاکٹر محمد طاہر القادری نے کہا ہے کہ انقلاب آئینی، جمہوری اور پر امن ہو گا۔ انقلاب کے بعد آئین کے دیباچہ اور پہلے 40آرٹیکل کا نفاذ ہو گا۔ انقلاب کے بعد احتساب ہو گا جو لوگ ہمارے انقلاب کو خلاف آئین کہتے ہیں ان کی اپنی زندگیاں آئین کے مطابق نہیں گزر رہیں۔ آئین کے دیباچہ اور آرٹیکل5 میں درج ہے کہ اقتدار عوام پاکستان کا حق ہے۔ عوام اس اقتدار کو بطور امانت حکمرانوں کو منتقل کرتے ہیں۔ حکمرانوں نے اس مقدس امانت میں مسلسل بدترین خیانت کی ہے اس لئے معاہدہ عمرانی عملاً ٹوٹ چکا ہے۔ اب نیا معاہدہ عمرانی ہو گا جوانقلاب کے بعد عوام کو اقتدار منتقل کرے گا۔ یوم انقلاب کیلئے پورے ملک کے یوسی سطح کے عہدیداران سے مشاورت روزانہ کی بنیاد پر جاری ہے۔ شہادت کو اتنا ہی آسان سمجھتا ہوں جس طرح ایک گھونٹ پانی پینا ہے۔ عوامی تحریک لاہور کے یوسی سطح کے عہدیداران سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ قاتلوں کی ایف آئی آر درج ہو چکی جبکہ مقتولین کی ایف آئی آر آج تک درج نہیں ہوئی، سب کو معلوم ہے کہ ایف آئی آر کس کے حکم پر نہیں درج ہو رہی۔ شہباز شریف کے اقتدار میں ہوتے ہوئے کوئی عدل نہیں ہو سکتا، ہم ٹربیونل کو مسترد کر چکے۔ انقلاب کے بعد جب عدالتیں آزاد ہونگی تب انصاف ہو گا، اس وقت ظالم کٹہرے میں ہوں گے۔