شہباز شریف ترکی کا دورہ مکمل کرکے آنے کے بعد سیدھے پنجاب اسمبلی گئے، چہرے پر تھکن کے آثار نہ تھے‘پنجاب اسمبلی میں مختلف شعبوں کی نمایاں خواتین مدعو

شہباز شریف ترکی کا دورہ مکمل کرکے آنے کے بعد سیدھے پنجاب اسمبلی گئے، چہرے پر تھکن کے آثار نہ تھے‘پنجاب اسمبلی میں مختلف شعبوں کی نمایاں خواتین مدعو

لاہور (خصوصی رپورٹر+ کامرس رپورٹر) خواتین کے عالمی دن کے موقع پر انہیں مزید حقوق دینے کیلئے قانون کی منظوری کے م وقع پر مختلف شعبوں سے تعلق رکھنے والی نمایاں خواتین کو پنجاب اسمبلی کی کارروائی دیکھنے کی دعوت دی گئی تھی۔ ان میں خواتین کے حقوق کی علمبردار آئمہ محمود، معروف قانون دان لبنیٰ چودھری، فلمسٹار سنگیتا اور نشو بیگم، معروف لیڈی ڈاکٹر صباحت عدیل، نرسنگ سپرنٹنڈنٹ روزینہ احمد اور صائمہ علی نمایاں تھیں۔ وزیراعلیٰ شہباز شریف کی پنجاب اسمبلی میں آمد کے موقع پر ان کی کابینہ کے لگ بھگ تمام وزرائ، پارلیمانی سیکرٹری اور جنرل و مخصوص نشستوں پر منتخب ارکان اسمبلی کی لگ بھگ 95 فیصد تعداد موجود تھی۔ اپوزیشن بنچوں پر تحریک انصاف، (ق) لیگ اور پیپلز پارٹی کے متعدد ارکان غیر حاضر تھے۔ وزیراعلیٰ پنجاب شہباز شریف گزشتہ روز ترکی کا ایک روزہ ہنگامی دورہ کر کے واپس لاہور پہنچے۔ طویل مسافت طے کر کے پاکستان پہنچنے کے باوجود میاں شہباز شریف لاہور ائرپورٹ سے سیدھے پنجاب اسمبلی آئے جہاں انہوں نے نہ صرف اسمبلی کے اجلاس میں شرکت کی بلکہ خواتین کی مناسب نمائندگی پنجاب 2014ء کا مسودہ قانون کی متفقہ منظوری کے بعد اجلاس سے خطاب بھی کیا۔ وزیراعلیٰ کو چاق و چوبند اور خوشگوار موڈ میں دیکھ کر مہمانوں کی گیلری میں بیٹھی خواتین نے انہیں بھرپور داد دی۔  بعدازاں وزیراعلیٰ نے ایوان اقبال میں خواتین کے عالمی دن کی مناسبت سے منعقدہ تقریب میں شرکت کی اور خواتین کی ترقی اور انکے حقوق کے تحفظ کیلئے دوررس اور جامع پیکیج کا اعلان کیا۔ وزیراعلیٰ نے ایوان وزیراعلیٰ میں ایک اجلاس کی صدارت کی اور غیرملکی وفد سے ملاقات کی۔ وزیراعلیٰ کے چہرے پر تھکن کے آثار نہیں تھے، وہ ہشاش بشاش دکھائی دے رہے تھے۔ ایوان اقبال میں خواتین کے عالمی دن پرمنعقدہ تقریب کے موقع پر وزیراعلی محمد شہبازشریف کے ساتھ سٹیج پر وزیر مملکت برائے قومی صحت سائرہ افضل تارڑ، وزیر مملکت برائے انفارمیشن ٹیکنالوجی انوشہ الرحمن، صوبائی وزیر ترقی خواتین حمیدہ وحید الدین اور صوبائی وزیر بہبود آبادی ذکیہ شاہنوازموجود تھیں۔ تقریب کی کمپیئرنگ کے فرائض بھی خاتون نے سرانجام دئیے۔ حافظہ روبینہ نے تلاوت قرآن پاک کی جبکہ خواتین نے نعت رسول مقبولؐ اور قصیدہ بردہ شریف پڑھا۔ تقریب کے دوران مختلف شعبہ ہائے زندگی میں نمایاں کارکردگی کا مظاہر ہ کرنیوالی خواتین کی دستاویزی فلم دکھائی گئی جسے وزیراعلیٰ نے بہت پسند کیا۔ ڈرامیٹک سوسائٹی کی جانب سے ’’بول کہ لب آزاد ہیں تیرے‘‘ کے تھیم پر خوبصورت پریزنٹیشن پیش کی گئی۔ وزیراعلیٰ نے عملی میدان میں نمایاں کارکردگی کا مظاہرہ کرنیوالی خواتین کیساتھ ملکر خواتین کی ترقی و خوشحالی اور انکے حقوق کے تحفظ کے حوالے سے گانا گایا۔ وزیراعلیٰ کے خطاب کے دوران ہال تالیوں سے گونجتا رہا۔