پیپلز پارٹی نے 5 سال اتحادیوں اور اپنی تجوریاں بھرنے میں ضائع کر دئیے: مشاہد اللہ

لاہور (خصوصی رپورٹر) مسلم لیگ(ن) کے مرکزی سیکرٹری اطلاعات ،سینیٹر مشاہداللہ خان نے کہاہے کہ اگر پیپلزپارٹی کی حکومت نے پانچ سال کے دوران ڈنگ ٹپاﺅ پالیسیوں کے بجائے اپنی توجہ عوام کے مسائل حل کرنے پر مرکوز رکھی ہوتی تو اسے نہ تو اپنے اتحادیوں کی جانب سے ڈرون حملوں کا ڈر ہوتا اور نہ ہی ایمپورٹڈ عناصر اسے لانگ مارچ کے خوف میں مبتلا کرپاتے- انہوںنے کہاکہ مسلم لیگ(ن) نے نیک نیتی کے ساتھ وفاق میں پیپلزپارٹی کے ساتھ بیٹھنے کی حامی بھری تھی تاکہ ایک واضح ایجنڈے کے مطابق آمر کے لگائے ہوئے زخموں کو دھوکر عوام کے دکھوں کامداوا کیا جا سکے لیکن پیپلزپارٹی کے قائدین نے معاہدوں اور وعدوں کی پاسداری نہ کرکے ہمیں اقتدار سے علیحدہ ہونے پرمجبور کردیا اور پیپلزپارٹی نے پانچ سال چھوٹی جماعتوں کے ہاتھوں بلیک میل ہوتے ہوئے اپنی اور ان کی تجوریاں بھرنے میںضائع کر ڈالے۔ مشاہداللہ خان نے کہاکہ پاکستان کے عوام صرف اور صرف بیلٹ کے ذریعے تبدیلی لانے پر یقین رکھتے ہیں۔ کوئی شیخ السلام اپنے ذاتی ایجنڈے یا کسی بیرونی طاقت کے ایما پر اپنی مرضی سے حکومت قائم نہیں کروا سکتا۔ لال مسجد میں معصوم اور بے گناہ بچیوں کی لاشیں گرائی جا رہی تھیں تو اس وقت شیخ السلام کہاں تھے؟