قاضی حسین احمد نے آخری دم تک فرقہ واریت کے خاتمہ کیلئے جدوجہد کی: وسیم اختر

قاضی حسین احمد نے آخری دم تک فرقہ واریت کے خاتمہ کیلئے جدوجہد کی: وسیم اختر

لاہور (خصوصی نامہ نگار) امیر جماعت اسلامی پنجاب ڈاکٹر سید وسیم اختر نے کہا ہے کہ سابق امیر جماعت اسلامی و ملی یکجہتی کونسل کے سربراہ قاضی حسین احمدکا انتقال ملک و قوم اور پورے عالم اسلام کے لئے بہت بڑا سانحہ ہے، انہوں نے زندگی کی آخری سانس تک فرقہ واریت کے خاتمے اور غلبہ دین کے حوالے سے جدوجہد جاری رکھی۔پروفیسر غفور احمد کے بعد قاضی حسین احمد کی وفات اسلامی قوتوں کا بہت بڑا نقصان ہے،ن کی ان تھک محنت کا نتیجہ ہی ہے کہ جماعت اسلامی کوملکی و غیر ملکی سطح پر مقبولیت حاصل ہے۔مختلف عوامی وفود سے گفتگو کرتے ہوئے ڈاکٹر سید وسیم اختر نے کہاکہ وہ اپنوں اور بیگانوں سب کے لئے محبت کا سرچشمہ تھے۔ وہ ایک درد دل رکھنے والے عظیم انسان تھے ۔ قاضی حسین احمد پاکستان میں اسلامی نظام کے قیام اور دنیا بھر میں اسلامی تحریکوں کی کامیابی کے لئے زندگی بھر اپنا بھرپور کردار اداکرتے رہے۔ خرابی صحت کے باوجود اپنی ذمہ داریوں سے غافل نہیں رہے۔ ان کی ہمیشہ خواہش رہی کہ ملک سے فرقہ واریت کا خاتمہ ہو اور پاکستان میں اسلامی نظام کا نفاذ ہو۔ قاضی حسین احمد کی دینی و ملی خدمات قابل قدر ہیں ان کی شخصیت قائدانہ صلاحیتوں سے مالامال تھی۔ان کی اتحاد امت کے لئے کاوشیں نا قابل فراموش ہیں۔