لاہور سمیت پنجاب بھر میں ایپکا کے احتجاجی مظاہرے، سول سیکرٹریٹ کا گھیرائو

لاہور (سپیشل رپورٹر) آل پاکستان کلرکس ایسوسی ایشن کے مرکزی چیئرمین محمد افضل، صوبائی صدر پنجاب محمد سلطان مجددی کی اپیل پر پنجاب بھر کے کلرکس و ملازمین نے  حکومت کی جانب سے مطالبات منظور نہ کرنے پر پنجا ب بھر کے اضلاع میں احتجاجی جلسے اور جلوس نکالے۔ دفاتر پر احتجاجی بینرز اور سیاہ پرچم لہرائے گئے۔ صوبائی دارالحکومت لاہور میں دو مقامات پر سول سیکرٹریٹ اور دھرم پورہ پل بلاک کر کے زبردست احتجاج کیا گیا۔ سول سیکرٹریٹ کا گھیرائو کیا گیا جس کی قیادت مرکزی چیئرمین ایپکا چوہدری محمد افضل، صوبائی صدر ایپکا پنجاب محمد سلطان مجددی اور صوبائی جنرل سیکرٹری نے کی۔ احتجاجی سرکاری ملازمین سے خطاب کرتے ہوئے محمد سلطان مجددی نے کہا کہ گریڈ ایک تا سولہ تک تمام سرکاری ملازمین کو بلا امتیاز ٹائم سکیل پروموشن کا اجراء کیا جائے اوردوسرے صوبوں کی طرز پر پوسٹوںکی اپ گریڈیشن کی جائے ، چوہدری محمد افضل نے بھی خطاب کرتے ہوئے کہاکہ ایڈہاک الائونسز کو بنیادی تنخواہ میں ضم کرکے نئے پے سکیل 2015 بنائے جائیں، ہائوس رینٹ موجودہ پے سکیل پردیا جائے، میڈیکل الائونس، کنوینس الائونس میں بھی اضافہ کیا جائے۔ سول سیکرٹریٹ کا گھیرائو کرنے پر پولیس کی طرف سے ایپکا رہنمائوں پر سنگین مقدمات درج کرنے کی دھمکیاں بھی دی گئیں۔ محکمہ اریگیشن کے کلرکس و ملازمین نے ڈویژنل جنرل سیکرٹری لاہور محمد ندیم چغتائی کی قیادت میں دھرمپورہ پل بلاک کرکے زبردست احتجاجی مظاہرہ کیا گیا جس کی وجہ سے دو گھنٹے تک ٹریفک بلاک رہی۔ مظاہرین سے خطاب کرتے ہوئے محمد ندیم چغتائی نے کہا کہ حکومت مسلسل بے حسی کا مظاہرہ کررہی ہے، مہنگائی میں اضافہ کرتے وقت کوئی نہیں سوچتا کہ کتنے فیصد مہنگائی کی جارہی ہے لیکن مہنگائی سے سب سے زیادہ متاثر ہونے والے طبقہ یعنی سرکاری ملازمین کی تنخواہوں کی بات ہو تو دس فیصدی فارمولہ یاد آجاتا ہے تمام کلرکس و ملازمین اس فارمولا کو مسترد کرتے ہیں۔