امریکہ یمن کے باغیوں کو شکست نہیں ہونے دے گا: مذاکرہ

لاہور (خصوصی نامہ نگار)امریکہ یمن کے باغیوںکو شکست نہیں ہونے دے گا۔جہادی جذبات رکھنے والے ممالک میں خانہ جنگی کرانا امریکی ایجنڈا ہے، یمن کابحران پرانا ہے 9/11کے بعد اس میں نئے عناصر شامل ہوئے۔یعقوب طاہر کی زیرصدارت ’’اظہار فورم‘‘ کے زیر اہتمام ’’یمن تنازعہ‘‘ کے حوالے سے مذاکرہ میں مرزا ایوب بیگ، عبداللہ طارق سہیل، حافظ شفیق الرحمان، لطیف چوہدری، رضوان رضی، اسرار بخاری، ڈاکٹر غالب عطائ، منصور اصغر، افضل رحمان نے کہا کہ اگر سعودی عرب نے بمباری نہ روکی تو امریکہ سعودیہ کے خلاف کارروائی سے بھی گریز نہیں کرے گا۔ ایران باغی حوثیوں کی بھرپور مدد اور تنازعے کو مسلکی رنگ دے رہا ہے۔ بگاڑ میں ایران اور مجوسی ذہنیت اثر انداز ہو رہی ہے۔ امریکہ ایران چپقلش ڈرامہ تھی اب ایران نے اس کو دوست بنا لیا۔ بدقسمتی سے اس وقت ایران مسلم ممالک کے خلاف خطے میں امریکی مفادات کا سب سے بڑا پاسبان ہے۔9/11کے بعد امریکی اس نتیجے پر پہنچ چکے تھے کہ اس خطے میں سنی انتہا پسندی کو روکنے کے لیے ایران کو سپورٹ کرنا چاہیے۔ شیعہ ممالک امریکہ کے تعاون سے اسرائیل کے لیے خطے میں دفاعی حصار بنا رہے ہیں۔ پاکستان نے افواج سعودیہ بھجوائیں تو ایران پاکستان کو بھی ٹارگٹ کرنے سے گریز نہیں کرے گا۔