فاٹا میں سینٹ الیکشن روکنے پر صدر، وزیراعظم کیخلاف الیکشن کمشن میں درخواست دائر

فاٹا میں سینٹ الیکشن روکنے پر صدر، وزیراعظم کیخلاف الیکشن کمشن میں درخواست دائر

لاہور، اسلام آباد (وقائع نگار خصوصی +آئی این پی) الیکشن کمشن میں فاٹا کے سینٹ انتخابات روکنے پر صدر، وزیراعظم کیخلاف کارروائی کیلئے درخواست دائرکردی گئی۔ درخواست گزار نے موقف اختیار کیا ہے کہ آئین کے تحت صدر کو اختیار حاصل نہیں کہ وہ سینٹ انتخابات روک سکے۔ وزیرِاعظم کی ایڈوائس پر صدر نے نوٹیفکیشن جاری کر کے آئین کی خلاف ورزی کی ہے۔ درخواست گزار نے الیکشن کمشن سے فاٹا کے انتخابات کا شیڈول فوری جاری کرنے اور صدر اور وزیرِ اعظم کیخلاف کارروائی کی استدعا کی ہے۔ واضح رہے نئے صدارتی حکم نامے میں قومی اسمبلی میں فاٹا ارکان سے کہا گیا تھا کہ وہ سینٹ الیکشن میں خفیہ رائے شماری کے ذریعے اپنی پسند کے صرف ایک سنیٹر کا انتخاب کرسکتے ہیں۔ صدارتی آرڈیننس میں ابہام کی وجہ سے پریزائیڈنگ افسر نے الیکشن کمشن سے انتخابی عمل ملتوی کرنے کی درخواست کی تھی۔لاہور سے وقائع نگار کے مطابق ہائیکورٹ میں سینٹ کے انتخابات میں آرٹیکل 62 اور 63 پر عملدرآمد نہ کرنے اور ہارس ٹریڈنگ کیخلاف متفرق درخواست دائر کر دی گئی ہے۔ درخواست میں موقف اختیار کیا گیا ہے کہ الیکشن کمشن نے ہائیکورٹ کے روبرو یقین دہانی کرائی تھی کہ آرٹیکل 62 اور 63 پر عملدرآمد کیا جائیگا۔ الیکشن کمشن سینٹ انتخابات میں اپنی ذمہ داریاں آئین کے مطابق پوری کرنے میں ناکام رہا ہے۔