لاہور ہائی کورٹ نے ریپڈ ٹرانزٹ منصوبے کے لیے پنجاب حکومت کو سو بسیں خریدنے کی اجازت دے دی۔

خبریں ماخذ  |  سٹی رپورٹر
لاہور ہائی کورٹ نے ریپڈ ٹرانزٹ منصوبے کے لیے پنجاب حکومت کو سو بسیں خریدنے کی اجازت دے دی۔

ریپڈ ٹرانزٹ منصوبے کے لیے بسوں کی خریداری کیس کی سماعت لاہور ہائی کورٹ میں ہوئی۔ سماعت کے دوران سیکرٹری ٹرانسپورٹ پنجاب نے عدالت کوبتایا کہ حکومت پنجاب کالجز اور یونیورسٹیوں کے لیے دو سو اور ریپڈ ٹرانسپورٹ منصوبے کے لیے سو بسیں درآمد کرنا چاہتی ہے مگر عدالتی حکم امتناعی کی وجہ سے بسیں درآمد نہیں کی جا سکیں گی۔ آئل کمپنیوں کے نمائندے نے عدالت کو بتایا کہ ملک میں یورو ٹو آئل کی قلت نہیں بلکہ آئل کمپنیاں ملک بھر میں یورو ٹو آئل سپلائی کرتی ہیں۔ دلائل سننے کے بعد عدالت نے پنجاب حکومت کو بسیں خریدنے کی اجازت دیتے ہوئے صوبے بھر کے لیے گیارہ سو بسیں خریدنے پر حکم امتناعی میں سترہ ستمبر تک توسیع کردی۔