ٹربیونل کے فیصلے سے ثابت ہو گیا، پیپلز پارٹی کا مینڈیٹ چرایا گیا، نوید چودھری

ٹربیونل کے فیصلے سے ثابت ہو گیا، پیپلز پارٹی کا مینڈیٹ چرایا گیا، نوید چودھری

لاہور(خبر نگار)پیپلز پارٹی کے رہنما اور 2013کے عام انتخابات این اے 125میں پیپلز پارٹی کے ٹکٹ ہولڈر نوید چودھری نے کہا ہے الیکشن ٹربیونل کے فیصلے سے ثابت ہوگیا 2013کے انتخابات میں پیپلز پارٹی کا مینڈیٹ چرایا گیا ۔ ماضی میں بھی سازش کے تحت ہر الیکشن میںہمارا مینڈیٹ چرایا جاتارہا، آج بھی پنجاب میں شفاف الیکشن کرائے جائیں تو فتح پیپلز پارٹی کی ہی ہوگی۔ پریس کلب میں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے انہوں نے کہا وہ این اے 125 سے تین مرتبہ الیکشن میں حصہ لے چکے ہیں، 2002 کے الیکشن میں انہیں رات کو جتو ا کر صبح ہرا دیا گیا جبکہ 2008 اور 2013 کے عام انتخابات میں بھی مخالف سیاسی جماعتوں کے ووٹوں کی تعداد میں غیر معمولی اضافہ ہوا حالانکہ حلقہ میں نہ ووٹروں کی تعداد بڑھی اور نہ ہی ٹرن آوٹ میں اضافہ ہوا تو پھر یہ ووٹوں کی تعداد کس طرح بڑھ گئی۔ مسلم لیگ ن کے امیدوار سعدرفیق نے اپنی پسند کا عملہ لگوایا تھا، الیکشن کے روز اس حوالے سے تحریری شکایت بھی جمع کرائی تھی جس کا آج تک جواب نہیں دیا گیا۔انہوں نے کہا کنٹونمنٹ بورڈ ز کے بلدیاتی انتخابات میں بھی حکومت لاہور میں ترقیاتی کام دھڑا دھڑکراتی رہی عملہ بھی ان کی اپنی مرضی کا تھا اور نتائج بھی پسند کے حاصل کیے گئے۔ پیپلز پارٹی نظریاتی جماعت ہے وہ اوچھے ہتھکنڈوں سے ختم نہیں ہو گی۔ الیکشن ٹربیونل کے فیصلے کے بعد میاں نوازشریف، شہباز شریف اور سعدرفیق کو پوری قوم سے معافی مانگنی چاہیے جو 1985سے لے کر اب تک جعلی حکومتیں بناتے رہے۔