حکومت کا بجٹ میں ریٹیلرز پر سیلز ٹیکس عائد کرنے کا فیصلہ

لاہور (احسن صدیق) وفاقی حکومت نے آئندہ مالی سال کے بجٹ میں ریٹیلرز  پر سیلز ٹیکس  عائد کرنے کا فیصلہ کیا ہے جبکہ انڈسٹری کے لئے جاری کئے گئے 90  فیصد ایس  آر اوز کو ختم کر دیا جائے گا جبکہ پٹرولیم  اور فارماسیوٹیکل  سیکٹر کے لئے جاری کئے گئے ایس آر اوز کو ختم  نہیں کیا جائے گا۔ ذرائع کے مطابق  فیصلہ آئندہ  مالی سال کے لئے ایف بی آر کی جانب سے ٹیکس تجاویز کی روشنی میں کیا گیا۔ ذرائع نے یہ بھی بتایا کہ حکومت کارپوریٹ  سیکٹر پر سپر ٹیکس  عائد کرنے  پر بھی غور کر رہی ہے۔ یہ ٹیکس  ان کمپنیوں پر عائد کیا جائے گا جن کی آمدنی  5  کروڑ روپے  سالانہ کے لگ بھگ ہو گی۔ اس ٹیکس سے آمدنی  کا تخمینہ 12  ارب روپے  ہے جو دہشت گردی کے خلاف جنگ کے اخراجات  پورے کرنے کے لئے استعمال کیا جائے گا۔ دریں اثنا کاروباری برادری جس میں ایف پی سی سی آئی  سرفہرست ہے نے حکومت پر واضح کیا ہے کہ ان کو یہ ٹیکس  منظور نہیں اور انڈسٹری  کے لئے مراعات  پر مبنی ایس آر اوز کو ختم  نہ کیا جائے اگر ایسا کرنا ہے تو ان مراعات  کو ٹیکس  قوانین کا حصہ  بنا دیا جائے۔ حکومت  نے اگر ایسا کیا تو ملک کی بزنس  مین کمیونٹی  اسکے خلاف بھرپور مزاحمت  کرے گی۔