جنگ، جیو کے مالک اور دیگر کیخلاف اندراج مقدمہ کی درخواست پر ایڈیشنل سیشن جج کا ایس ایچ او اسلامپورہ کو قانونی کارروائی کا حکم

لاہور (اپنے نامہ نگار سے) ایڈیشنل سیشن جج غلام عباس سیال نے جیو اور جنگ گروپ کے مالک میر شکیل الرحمان و دیگرکے خلاف اندارج مقدمہ کی درخواست پرایس ایچ او تھانہ اسلامپورہ کو قانون کے مطابق کارروائی کرنے کا حکم دے دیا ہے۔ چیئرمین زندہ باد پارٹی آفتاب احمد ورک ایڈووکیٹ نے سی سی پی او لاہور، ایس ایچ او اسلامپورہ، عامر میر، میر شکیل الرحمان، بیوروچیف، نیوز ایڈیٹر و دیگر ذمہ داران کو فریق بناتے ہوئے موقف اختیارکیا تھا کہ 19 اپریل کو حامد میر قاتلانہ حملہ میں زخمی ہوئے اور حملہ کے کچھ دیر بعد ان کے بھائی عامر میر نے بیان دیا یہ حملہ آئی ایس آئی کے سربراہ لیفٹیننٹ جنرل ظہیرالاسلام نے کرایا ہے اور یہ بھی بیان دیا اس کے بھائی کو آئی ایس آئی کی طرف سے متواتر دھمکیاں موصول ہورہی تھیں۔ عامر کے بیان کو جیو نیوز پر بار بار نشر کیا گیا کئی ایک تجزیہ نگاروں نے اس بیان کی تائید کی اور اسی بیان کو پاکستان دشمن غیرملکی ایجنسیوں نے اپنے ٹی وی چینلز پر زوروشور سے نشرکیا اور اگلے روز اپنے اخباروں کی شہ سرخیوں میں جگہ دی عامر میرکی طرف سے بغیر کسی تحقیق، تفتیش وثبوت کے بیان دینا اورجیوز نیوز چینل کا اس بیان کو قومی اوربین الاقوامی سطح پر نشرکرنا تحفظ پاکستان، قومی سلامتی، افواج پاکستان اور آئی ایس آئی کے خلاف بنائی جانے والی انتہائی گھناؤنی سازش اور منصوبہ بندی کا نتیجہ ہے جو آئین پاکستان اور ملکی قوانین کی زد میں آتا ہے۔ جس طرح بین الاقوامی سطح پر بھارت، اسرائیل، امریکہ، برطانیہ کی ایجنسیوں اور ان کے حاشیہ بردار چند دیگر ممالک نے اپنے چینلز اور اخبارات کے ذریعے افواج پاکستان اور آئی ایس آئی کو بدنام کرکے پاکستان کے وجود، قومی سلامتی اور تحفظ پاکستان کے محافظ اداروں کو کمزورکرنے کے لئے ایڑھی چوٹی کا زور لگایا ایک محب وطن کی حیثیت سے اپنا قومی فریضہ ادا کرتے ہوئے ایس ایچ او اسلامپورہ کو مقدمہ کے اندراج کے لئے درخواست دی تھی مگر اس نے مقدمہ درج نہیں کیا عدالت سے استدعا ہے ان کے خلاف مقدمہ کے احکامات جاری کرتے ہوئے ان کو کیفرکردار تک پہنچایا جائے۔ عدالت نے مذکورہ بالا احکامات جاری کرتے ہوئے درخواست نمٹا دی۔