حکومت ہائیڈل پراجیکٹس پر توجہ دے تو پاکستان دوبارہ زندہ ہوسکتا ہے: آبی ماہرین

لاہور (سپیشل رپورٹر) حکومت کو تھرمل کی بجائے ہائیڈل پراجیکٹوں پر توجہ دے تو پاکستان دوبارہ زندہ ہو سکتا ہے۔ نوازشریف نے چین کے دورے کے دوران کوہالہ اور بونجی ہائیڈل پراجیکٹ کے حوالے سے کوئی بات نہیں کی، ملک کو 10 روپے فی یونٹ والی بجلی نہیں چاہئے بلکہ ملک کو سستی بجلی کی ضرورت ہے۔ یہ باتیں گزشتہ روز آبی ماہرین نے روزنامہ نوائے وقت سے چیت کرتے ہوئے کہیں۔ سندھ طاس واٹرکونسل کے چیئرمین محمد سلمان خان نے کہا نیلم جہلم اور نیوکلیئر انرجی کے حوالے سے بات چیت خوش آئند ہے لیکن اگر دیکھا جائے تو نوازشریف نے کوہالہ ہائیڈور پراجیکٹ کا ذکر نہیں کیا اس سے1350 میگاواٹ بجلی پیدا ہو سکتی ہے۔اسی طرح بونجی ڈیم سے 6 ہزار میگا واٹ بجلی پیدا ہو سکتی ہے۔ ان ڈیموں پر بات چیت کی جاتی تو دورہ کے زیادہ بہتر نتائج آسکتے تھے۔ اقبال احمد نے بات کر تے ہو ئے کہا حکومت نے اپنے اعلانات جو کئے تھے کام اس سے الٹ ہو رہا ہے، نواز شریف دورہ چین بات چیت بہتر ہوئی ہے ہر سربراہ مملکت کے دورہ کے دوران بات چیت بہتر ہوتی ہے لیکن بعدازاں دورے سے واپسی پر جو معاہدے ہوتے ہیں ان پر عمل درآمد نہیں ہو سکتا ہے جس کے لئے ضروری ہے پاکستان سستی بجلی پر توجہ دے۔ انہوں نے کہا حکومت کالاباغ ڈیم کا اعلان کرے تاکہ ملک سستی بجلی اور پانی کی قلت دونوں پر قابو پایا جائے۔
آبی ماہرین