فیکٹری ایریا میں گیس لیکج‘ ماں باپ کے بعد 2 بچے بھی چل بسے

لاہور (نامہ نگار) فیکٹری ایریا میں پانچ روز قبل سوئی گیس پائپ لائن لیک ہونے کے باعث جھلس کر ہلاک ہونے والے میاں بیوی محمد اشرف اور نسرین بی بی کے دو زخمی بچوں ڈیڑھ سالہ علی رضا اور 10سالہ صبا نے بھی گذشتہ روز ہسپتال میں دم توڑ دیا ہے۔ یوں اس واقعہ میں ہلاک ہونے والوں کی تعداد چار ہو چکی ہے جبکہ ہسپتال میں زیرعلاج مزید بچیوں شہربانو اور طیبہ کی حالت تشویشناک ہے۔ متوفین کے ورثاء اور اہل علاقہ نے شدید احتجاج کرتے ہوئے گذشتہ روز مین روڈ بلاک کر دی اور چیف جسٹس افتخار محمد چودھری سے اپیل کی کہ محکمہ سوئی گیس کی غفلت اور ان کے خلاف کارروائی نہ کرنے پر پولیس کے خلاف ازخود نوٹس لیں۔ متوفی محمد اشرف کے ماموں محمد اسلم نے بتایا کہ ہم نے متعدد بار سوئی گیس کے دفتر میں درخواست دی تھی کہ علاقہ کی مین پائپ لائن ٹھیک نہیں مگر انہوں نے ہماری ایک نہ سنی اور ان کی غفلت سے پورا خاندان تباہ ہو گیا۔ انہوں نے بتایا کہ ہم نے کنٹونمنٹ بورڈ‘ محکمہ سوئی گیس اور ٹھیکیدار لطیف رحمانی کے خلاف مقدمہ درج کرایا ہے مگر پولیس نے صرف ٹھیکیدار لطیف کو گرفتار کیا ہے۔
چل بسے