لاہورمیں تحفظ ناموس رسالت محاذ کے زیر اہتمام داتا دربارسانحے کے ملزموں کی عدم گرفتاری کے خلاف ریلی نکالی گئی۔ ۔

لاہورمیں تحفظ ناموس رسالت محاذ کے زیر اہتمام داتا دربارسانحے کے ملزموں کی عدم گرفتاری کے خلاف ریلی نکالی گئی۔ ۔

ریلی میں سنی مکتبہ فکر کی درجنوں دینی جماعتوں کے سینکڑوں کارکنوں نے شرکت کی۔ ریلی داتا دربارسے شروع ہوئی اورسرکلرروڈ ریلوے سٹیشن، پریس کلب اورگورنرہاوس سے ہوئی پنجاب اسمبلی پہنچی جہاں شرکا نے دھرنا دیا۔ ریلی کے ساتھ سینکڑوں پولیس اہلکارتعینات کئے گئے۔ ایس پی سول لائن ڈاکٹر حیدر اشرف بھی ساتھ رہے اورریلی کی سمت آنے والی تمام ٹریفک کو روک دیا گیا۔ مظاہرین سے خطاب کرتے ہوئے سنی اتحاد کونسل کے چیئرمین صاحبزادہ فضل کریم نے کہا کہ سانحہ داتا دربار کے چہلم تک ان کے مطالبات کو تسلیم نہ کیا گیا تو اسلام آباد میں دما دم مست قلندر ہوگا۔ ریلی میں شریک قائدین نے وفاقی اور صوبائی حکومتوں سے مطالبہ کیا کہ ان کے مطالبات کوپوراکیا جائے اورکالعدم تنظیموں کی سرپرستی پر صوبائی وزیر قانون رانا ثنا اللہ کو برطرف کیا جائے۔ اس کے بعد ریلی داتا دربار کے سامنے پہنچ کرپرامن طورپر منتشرہوگئی ۔