کارسروس کی اجرت مانگنے پر پولیس کا محنت کش پر تشدد، پی ٹی آئی کارکن پر گاڑی چڑھا دی

لاہور (سٹاف رپورٹر+ نوائے وقت رپورٹ) تھانہ مغل پورہ کے علاقہ میں پولیس اہلکاروں نے مبینہ طور پر محنت کش اور پی ٹی آئی کے کارکن کو تشدد کا نشانہ بنا ڈالا۔ محنت کش شدید زخمی ہو گیا۔ تشدد پر درجنوں افراد نے تھانہ مغل پورہ کے باہر احتجاجی مظاہرہ کیا۔ پولیس کے مطابق تشدد کرنیوالے ملزم آصف کو حراست میں لے لیا گیا ہے جس کیخلاف قانون کے مطابق کارروائی کی جائے گی۔ معلوم ہوا ہے جمعہ کی رات ڈی ایس پی شمالی چھاؤنی کا گن مین آصف ڈی ایس پی کی گاڑی واش کروانے مغل پورہ کے سروس سٹیشن پر گیا تو سروس سٹیشن پر موجود عملہ نے گاڑی دھو کر پیسوں کا تقاضا کیا جس پر آصف نے پیسے دینے سے انکار کرتے ہوئے دوسرے پولیس اہلکاروں کو فون کر دیا محافظ سکواڈ کے اہلکاروں کے سٹیشن پر پہنچنے پر پولیس اہلکاروں اور محنت کش شکیل کے درمیان تلخ جملوں کا تبادلہ ہو گیا۔ اطلا ع ملتے ہی قریبی دکان میں موجود پی ٹی آئی کا کارکن ظہیر بھی موقع پر پہنچ گیا اور بیچ بچائو کی کوشش کرتا رہا اس دوران آصف نے ظہیر پر گاڑی چڑھا دی۔ محنت کش شکیل اور ظہیر نامی شخص گاڑی کی ٹکر لگنے اور پولیس اہلکاروں کے تشدد سے شدید زخمی ہو گئے اور ظہیرکا دانت ٹوٹ گیا۔ اطلاع ملتے ہی پی ٹی آئی کے کارکنوں اور اہل علاقہ کی بڑی تعداد جمع ہو گئی جنہوں نے مغل پورہ تھانے کے باہر پولیس گردی کیخلاف شدید احتجاج کیا اور پولیس کیخلاف نعرے بازی بھی کی۔
پولیس تشد