مخدوم شہاب کے سندھ اور پنجاب میں مرید ہیں اسی لئے جنوبی پنجاب کیلئے انہیں صدر بنایا‘ گیلانی

لاہور (خصوصی رپورٹر) وزیراعظم یوسف رضا گیلانی نے کہا ہے کہ پیپلز پارٹی پنجاب تنظیم کو دو حصوں میں تقسیم کرتے ہوئے جنوبی پنجاب کی الگ تنظیم بنا دی ہے۔ صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے وزیراعظم نے بتایا کہ پنجاب بڑا صوبہ ہے جس میں ایک صدر کے لئے موثر طور پر کام کرنا مشکل تھا۔ وفاقی وزیر برائے ٹیکسٹائل مخدوم شہاب الدین جنوبی پنجاب کے صدر ہوں گے جبکہ امتیاز وڑائچ باقی پنجاب کے صدر ہیں۔ مخدوم شہاب الدین کے سندھ میں جنوبی پنجاب میں مرید ہیں انہیں شہید بے نظیر بھٹو نے پارٹی کی سنٹرل ایگزیکٹو کمیٹی کا رکن بنایا تھا۔ پارٹی کے ساتھ ان کی وابستگی بہت پرانی ہے۔ پارٹی کی منشور کمیٹی تشکیل دیدی گئی ہے جو اس بات کا تعین کرے گی کہ جنوبی پنجاب کن علاقوں پر مشتمل ہو گا۔ بہاولپور ریاست کا سٹیٹس بحال کرنے کی باتیں کرنے والے پلانٹڈ ہیں جس کا مقصد یہ ہے کہ جنوبی پنجاب الگ صوبہ بن سکے لیکن پیپلز پارٹی جنوبی پنجاب کو الگ صوبہ بنانے کے لئے کمٹڈ ہے۔ امتیاز صفدر وڑائچ بہت محنتی اور کارکن آدمی ہیں لاہور میں طویل عرصہ سے صرف گھر کی خاندان ہی نشست جیت سکا ہے اس لئے ثمینہ گھرکی کو لاہور کا صدر بنایا ہے جہاں تک پارٹی کے کچھ عہدیداروں کا تحریک انصاف میں شمولیت کی باتیں ہیں تو پہلے بھی بہت بڑے بڑے رہنما پیپلز پارٹی کو چھوڑ کر گئے تھے لیکن پارٹی کا ووٹرکسی شخصیت کے ساتھ نہیں بلکہ پارٹی کے منشور اور نظریہ کے ساتھ ہے کسی کے آنے جانے سے کوئی فرق نہیں پڑتا۔