بھارتی خفیہ اداروں نے پاکستان میں دہشت گردی کیلئے منشیات کی رقم خرچ کرنا شروع کر دی

لاہور (معین اظہر سے) بھارت کے خفیہ اداروں نے پاکستان میں دہشت گردی کے لئے افغانستان کی منشیات سے حاصل ہونے والی رقم خرچ کرنی شروع کر دی ہے اور منشیات کے ان سمگلروں کو جعلی ویزوں پر پاکستان میں داخل کیا جا رہا ہے اور جعلی منشیات کے سمگلروں کے جعلی ویزوں پر پاکستان آمد کے واقعات زیادہ ہوگئے ہیں، افغانستان میں منشیات کی عالمی منڈی کے اثرات پاکستان پر پڑنا شروع ہوگئے جس کی وجہ سے پاکستان کو مستقبل میں بین الاقوامی اعتراضات کا سامنا کرنا پڑ سکتا ہے۔ بھارت کے خفیہ اداروں نے افریقہ میں اپنے منشیات کے سمگلروں سے رابطے رکھے ہوئے ہیں۔ وزارت خارجہ کے ریکارڈ کے مطابق افریقہ سے گزشتہ تین سالوں میں افریقہ سے پاکستانی سفارت خانوں سے چار ہزار ویزے جاری ہوئے جن میں سے 350 افراد کو پاکستان میں منشیات کے سمگلروں سے رابطوں سے پکڑ لیا گیا جبکہ 298 افریقی باشندوں کے پکڑے جانے کے بعد ان کے ویزے چیک کرنے پر جعلی نکلے، اس پر وزارت خارجہ نے اعلیٰ سطحی کمیٹی بنا کر افریقی ممالک کے لئے نئی ویزہ پالیسی ترتیب دی ہے جس کو چند روزمیں نافذ العمل کر دیا جائے گا۔ اس کے علاوہ وزارت خارجہ نے منشیات کی سمگلروں کے لئے بین الا وزارتی کمیٹی قائم کرکے کارروائی کی ہدایات جاری کی ہیں جبکہ بعض خفیہ اداروں نے حکومت پاکستان کو رپورٹ دی ہے کہ منشیات کے پیسے سے پاکستان میں دہشت گردگروپوں کو مدد دی جارہی ہے ، بین الاقوامی طور پر پاکستان کو میڈیا کے ذریعے بدنام کرنے کے لئے بھارتی خفیہ ادارے یہ رقم استعمال کر رہے ہیں۔ اس سلسلے میں ذرائع نے بتایا ہے کہ قبائلی علاقوں اور افغانستان کے ساتھ سرحدی علاقوں میں پاکستان سے بڑے جرائم میں ملوث افراد روپوش ہوتے رہے ہیں اور امریکہ کے افغانستان آنے اور پاکستانی فوج کے وہاں جانے کے بعد یہ کریمنل جو سمگلنگ، اغوا اور دیگر جرائم میں ملوث تھے ان کو بھارتی خفیہ ادارے افریقی ممالک میں بجھوا کر ان کے خلاف استعمال کر رہے ہیں جبکہ نائجیریا کو اس مقصد کے لئے استعمال کیا جارہا ہے۔ اس حوالے سے جو وزارت خارجہ سے تفصیلات ملی ہیں ان کے مطابق 2007ءمیں افریقی ممالک کو کو 1255 ویزے جاری کئے گئے جن میں سے 106 افراد پاکستان میں پکڑے گئے اور 98 کے ویزے جعلی نکلے ہیں۔ اسی طرح 2008ءمیں افریقی ممالک کو 602 ویزے جاری کئے گئے جس مین سے 81 افراد منشیات میں پکڑے گئے۔ 2009 ءمیں ستمبر تک افریقی ممالک کو 326 ویزے جاری کئے گئے ان میں سے 39 افراد منشیات کے کیسوں میں پکڑے گئے اور 13 کے ویزے پکڑے جانے کے بعد جعلی نکلے۔ اس پر اب وزارت خارجہ انکوائری کروا رہی ہے کہ کہیں پاکستان کے سفارت خانے کا کوئی عملہ تو ملوث نہیں ہے۔ تاہم اس حوالے سے نئی پالیسی جو طے کی گئی ہے اس کے مطابق اب افریقی ممالک کے وزارت خارجہ سے لیٹر ، پاکستا ن کی کمپنی کا دعوت نامہ ، وہاں انکم ٹیکس اور کاروبار کی تفصیلات دینے کے بعد ویزے جاری ہونگے۔
بھارت، رقم