لاہور میں بھی بھتہ خور سرگرم، انکار پر فائرنگ، اہل علاقہ کا احتجاج

لاہور میں بھی بھتہ خور سرگرم، انکار پر فائرنگ، اہل علاقہ کا احتجاج

لاہور (نوائے وقت) بھتہ خوری کی بیماری کراچی سے دوسرے شہروں میں بھی پہنچنے لگی۔ نجی ٹی وی کے مطابق لاہور کے تاجروں کو بھتہ خوروں کے فون آنے لگے۔ حیدر آباد کے تاجر رہنما کہتے ہیں ہفتے بھر میں 100 وارداتیں ہوئی ہیں۔ پولیس تین دن میں صورتحال سنبھالے ورنہ ہڑتال کرینگے۔ لاہور کے علاقے شادباغ میں بھتہ خوری کی شکایات سامنے آئی ہیں جن سے مکینوں میں تشویش پائی جاتی ہے۔ اہل علاقہ نے بھتہ خوروں کے خلاف احتجاج کیا اور ٹائر جلا کر سڑک بلاک کر دی۔ مظاہرین کا کہنا ہے ٹیلی فون، موبائل سے پہلے نرم پھر گرم لہجے میں رقم بطور بھتہ ادا کرنے کا کہا جاتا ہے۔ رقم پہنچ گئی تو خیریت ورنہ فائرنگ کی جاتی ہے۔ تھانہ شادباغ کے قریب واقع ہوٹل پر دو لڑکے بھتہ خوری کیلئے آئے اور بھتہ نہ ملنے پر فائرنگ کر کے فرار ہو گئے۔ پولیس کا کہنا ہے بھتہ خوروں کی گرفتاری کیلئے چھاپے مارے جا رہے ہیں۔
بھتہ خوری