’’ورکنگ بائونڈری پر دیوار تقسیم کشمیر کی بھارتی سازش ہے‘‘: شوریٰ جماعت اسلامی

’’ورکنگ بائونڈری پر دیوار تقسیم کشمیر کی بھارتی سازش ہے‘‘: شوریٰ جماعت اسلامی

لاہور (ثناء نیوز) جماعت اسلامی پاکستان کی مرکزی مجلس شورٰی نے ورکنگ بائونڈری پر دیوار برلن کی طرز پر 145کلومیٹر طویل دیوار کی تعمیر کے بھارتی فیصلے کی شدید مذمت کرتے ہوئے اسے تقسیم کشمیر کی ایک سازش اوربین الاقوامی قوانین اور بنیادی انسانی حقوق کی شدید پامالی قرار دیا ہے۔ شورٰی نے اس امر پر بھی تشویش کا اظہار کیا کہ بھارت نے اس عرصہ میں مقبوضہ ریاست میں ریاستی دہشت گردی کے ساتھ ساتھ سیزفائر لائن پر بلا اشتعال فائرنگ کا سلسلہ جاری رکھا جس کے نتیجے میں شہادتوں کے علاوہ لوگوں کی املاک کو بھی نقصان پہنچا۔ دوسری جانب کشمیر اور پاکستان کے خلاف جارحانہ ماحول پیدا کرنے کے لئے وادی کشمیر میں مجاہدین کے ساتھ جعلی جھڑپوں کا ڈرامہ رچایا گیا جسے خود بھارتی ذرائع ابلاغ نے حال ہی میں بے نقاب کیا ہے۔  مجلس شوریٰ نے حکمران جماعت اور حکومت پاکستان سے یہ مطالبہ کیا کہ اس اہم مسئلے میں ایک فریق کی حیثیت سے کشمیری اور پاکستان کی قومی قیادت کی مشاورت سے ایک ایسی جامع کشمیر پالیسی تشکیل دی جائے جو تحریک آزادی کشمیر کی تقویت اور کامیابی کا ذریعہ بن سکے جبکہ مقبوضہ ریاست میں تحریک آزادی کشمیر کی حوصلہ افزائی کے لئے آمدہ فروری میں بھرپور ہفتہ یکجہتی کشمیر منانے کا اہتمام کیا جائے۔ نیز اقوام متحدہ، او آئی سی ،یورپی یونین اور دیگر بین الاقوامی سیاسی اور انسانی حقوق کے اداروں میںبھی بھارتی ریاستی دہشت گردی کو بے نقاب کیا جائے اور بھارت پر یہ بھی واضح کیا جائے۔ اجلاس میں حکومت سے یہ مطالبہ بھی کیا گیا کہ ورکنگ بائونڈر ی پر دیوار برہمن کی تعمیر کے عمل کو روکنے کے لئے سیاسی سفارتی، قانونی اور دیگر تمام ضروری اقدامات بروئے کار لانے کا اہتمام کیا جائے۔ منصورہ میں ہونیوالے اجلاس کی صدارت سید منور حسن نے کی۔