سزائے موت کے قانون پر عملدرآمد نہ ہوا تو 14 فروری سے تحریک چلائیں گے: مقررین

لاہور (سپیشل رپورٹر) عشق رسول کے بغیر زندگی فضول ہے۔ حکمرانوں کو کسی صورت میں سزائے موت ختم کرنے کی اجازت نہیں دیں گے۔ حکمرانوں کو بتا دینا چاہتے ہیں کہ نبی کریم کی ناموس کی حفاظت اللہ کی ذات کرتی ہے۔ اس بات کا اعلان تحفظ ناموس رسالت محاذ کے زیراہتمام ایوان اقبال میں ممتاز حسین قادری کی گرفتاری کے تین سال مکمل ہونے پر ملک گیر تحفظ ناموس رسالت کانفرنس میں کیا گیا۔ کانفرنس کی صدارت کرتے ہوئے تحفظ ناموس رسالت محاذ کے صدر علامہ رضائے نقشبندی نے کہا کہ کسی صورت عشق رسول کے جذبوں کو کمزور نہیں ہونے دیں گے۔ انہوں نے شرکاءسے اس بات کا عہد لیاکہ اگر حکومت نے سزائے موت کے قیدیوں کو یکم فروری تک سزائے موت نہ دی تو 14 فروری سے ملک بھر میں احتجاجی تحریک شروع کی جائےگی۔ مولانا راغب نعیمی نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ربیع الاول شریف کے جلوسوں کو حکومت مکمل سکیورٹی فراہم کرے۔ سابق وفاقی وزیر پیر سید ساجد حامد کاظمی نے کہاکہ وزیراعظم یوتھ بزنس اسلامی اصولوں کے تحت کریں تاکہ نوجوان نسل کو سودی قرضوں سے بچایا جا سکے۔ ۔ مولانا محمد رمضان سیالوی خطیب داتا دربار نے کہا کہ ممتاز حسین قادری رہائی تحریک کو منظم انداز میں چلانے کی ضرورت ہے۔ ڈاکٹر محمد اشرف جلالی نے کہا کہ ہم ممتاز حسین قادری کی رہائی تک چین سے نہیں بیٹھیں گے۔