الطاف جوش خطابت میں حواس پر قابو رکھیں: زعیم قادری

لاہور (خصوصی رپورٹر) مسلم لیگ (ن)‘ عوامی نیشنل پارٹی‘مسلم لیگ (ق) اور تحریک انصاف کے رہنماﺅں نے سندھ کی تقسیم کی باتوں کو مسترد کر دیا ہے اور ایم کیو ایم کے رہنماﺅں کی الطاف حسین کی وکالت کو چور مچائے شور قرار دیا ہے۔ مسلم لیگ (ن) کے مرکزی رہنما سید زعیم حسین قادری نے کہا ہے کہ الطاف بھائی کو جوش جذبات میں ہوش پر قابو رکھنا چاہئے تھا۔ سندھ یا ملک کی تقسیم کی باتیں انہیں زیب نہیں یتیں۔ عوامی نیشنل پارٹی کے سابق سیکرٹری جنرل احسان وائیں ایڈووکیٹ نے کہا کہ سندھ کی تقسیم اور الگ ملک کی باتیں نامناسب ہیں۔ انہوں نے کہا کہ عوامی نیشنل پارٹی کیلئے سندھ کی تقیم ناقابل قبول ہوگی۔ مسلم لیگ (ق) کے مرکزی نائب صدر امتیاز رانجھا نے کہا کہ متحدہ قومی موومنٹ کے قائد نے جو کچھ کہا وہ قطعی طورپر مناسب نہیں ہے۔سندھ کی تقسیم یا ملک تقسیم کرنے کا کہنا کسی بھی طورپر انہیں زیب نہیں دیتا۔ تحریک انصاف ک رہنما فر جاوید مون نے کہا کہہ سندھ کی تقسیم اور ملک توڑنے کی باتیں ناقاب برداشت ہیں جنہیں تحریک انصاف نے مسترد کر دیا ہے‘ تاہم ایم کیو ایم کے رہنماﺅں کی الاف بھائی کی وکالت چور مچائے شور والی بات ہے۔