پاکستان اور سعودی عرب لازوال دینی و ملی رشتے میں جڑے ہوئے ہیں: سعودی سفیر

لاہور( خصوصی نامہ نگار) پاکستان میں متعین سعودی سفیر ابراہیم الغدیر اور وائس چانسلر امام جامعہ محمد بن السعود الاسلامیہ ڈاکٹر سلیمان بن عبداللہ ابالخیل کے اعزاز میں مرکزی جمعیت اہل حدیث پاکستان کے سربراہ سینیٹر پروفیسر ساجد میر اور ناظم اعلیٰ ڈاکٹر حافظ عبدالکریم کی طرف سے مرکز 106 راوی روڈ میں استقبالیہ دیا گیا۔ جس سے خطاب کرتے ہوئے ڈاکٹر سلیمان بن عبداللہ ابالخیل نے کہا کہ اسلام تشدد کی بجائے رواداری اور احترام کا درس دیتا ہے رسول کریمؐ نے دشمنوں سے بھی حکمت اور دانائی سے بات کی، قرآن و سنت کی تعلیمات اپنا کر امت مسلمہ اپنا کھویا ہوا مقام بحال کر سکتی ہے۔ سعودی عرب اور پاکستان میں اخوت کا رشتہ روز بروز توانا ہو رہا ہے۔ حرمین شریفین میں روزانہ پاکستان کی سلامتی و استحکام کی دعائیں ہوتی ہیں۔ پاکستان کا دشمن ہمارا دشمن اور پاکستان کا دوست ہمارا دوست ہے۔ سعودی سفیر ابراہیم الغدیر نے کہا کہ پاکستان اور سعودی عرب لازوال اور مضبوط دینی اور ملی رشتے میں جڑے ہوئے ہیں۔ ہمیں اسلام اور عالم اسلام کی ترقی و استحکام کے لئے مل کر چلنا ہو گا۔ مسلمانوں میں اتحاد اور یکجہتی وقت کی اہم ضرورت ہے۔ پروفیسر ساجد میر نے کہا کہ حرمین شریفین کے تحفظ کے لئے ہر قسم کی قربانی دیں گے۔ پاکستان اور سعودی عرب یک جان دوقالب ہیں، کوئی طاقت ان میں دراڑ پیدا نہیں کر سکتی۔ انہوں نے کہا کہ طاغوتی طاقتیں فرقہ وارانہ جنگ میں دھکیل کر ہمیں کمزور کرنا چاہتی ہیں مگر ہم ایسی سازشوں کا مقابلہ کریں گے۔ ڈاکٹر حافظ عبدالکریم نے کہا کہ سعودی عرب عالم اسلام کی امیدوں کا مرکز ہے عالم اسلام کی وحدت حرمین شریفین کی وجہ سے ہے۔ استقبالیہ سے مولانا ابوتراب، مولانا یٰسین ظفر نے بھی خطاب کیا۔