میوہسپتال سے اغوا ہونیوالا بچہ جناح ہسپتال سے بازیاب، خاتون گرفتار

لاہور(نیوزرپورٹر)میو ہسپتال کی چلڈرن وارڈ سے اغوا ہونے والا دو روز کا نومولود جناح ہسپتا سے بازیاب کرا لیا گیا۔ اغواء کار خاتون کو گرفتار کرلیا گیا۔ دو روز قبل غازی روڑ لاہور کے رہائشی منور رفیق اپنے بیٹے کو سانس میں رکاوٹ پیدا ہونے کے باعث میو ہسپتال لاہور کے چلڈرن وارڈ میں داخل کرایا۔ والد منور رفیق کا کہنا تھا کہ انہیں سارا دن بچے کے پاس جانے نہیں دیا گیا جس پر وارڈ میں بچے کا پتہ کروایا تو وہ بیڈ سے غائب پایا گیا۔ ڈاکٹروں اور نرسوں سے پوچھ گچھ کی تو انہوں نے لاعلمی کا اظہار کیا۔ بعد ازاں والد کی درخواست پر تھانہ گوالمنڈی میں نامعلوم افراد عورت کے خلاف مقدمہ درج کرلیا گیا۔ بچے کے اغوا کی خبر سن کے وزیر اعلیٰ پنجاب کے مشیر برائے صحت خواجہ سلمان رفیق بھی موقع پر پہنچ گئے اور بچے کے والد منور رفیق سے ملاقات کرتے ہوئے انکی حوصلہ افزائی کی اور پولیس کوبچہ فوری بازیاب کرانے کے احکامات دیئے۔ جس پر پولیس نے رات گئے میوہسپتال لاہور سے اغوا نومولود بچہ بازیاب کرالیا۔ پولیس کے مطابق بچے کو جناح ہسپتال سے بازیاب کرایا گیا جبکہ اغوا کرنے والی خاتون کو گرفتار کرلیا گیا ہے جس کا نام شازیہ ہے۔