نواز شریف جرا تمندانہ فیصلے کریں، یورپی یونین کے مقابلے میں اسلامی یونین بنائیں: حافظ سعید

نواز شریف جرا تمندانہ فیصلے کریں، یورپی یونین کے مقابلے میں اسلامی یونین بنائیں: حافظ سعید

لاہور (این این آئی) جماعتہ الدعوة کے امیر پروفیسر حافظ محمد سعید نے کہا ہے کہ وزیراعظم نو از شریف ملک کے مسائل حل کرنے کیلئے سنجیدہ ہیں اور امید ہے وہ جلد ہی ملکی مسائل کا حل نکال لیں گے‘ وقت آگیا ہے کہ آگے بڑھ کر جرا¿تمندانہ فیصلے کئے جائیں جو کہ ہر قسم کے بیرونی دباﺅ سے آزاد ہوں‘ نواز شریف کو چاہئے کہ یورپی یونین کے مقابلے میں ایک عظیم اسلامی یونین کی بنیاد رکھیں‘ پاکستان میں دہشتگردی کا مکمل ذمہ دار امریکہ ہے جبکہ انرجی بحران پیداکرنے اور ہر سال سیلاب لانے کا ذمہ دار بھارت ہے۔ اسے چاہئے کہ پاکستان بارے اپنی پالیسی تبدیل کرے‘ ڈرون حملے روکنے کیلئے نہ تو زرداری حکومت نے کوئی ٹھوس منصوبہ بندی کی اور نہ ہی مو جودہ حکومت اس پر کوئی عملی اقدامات کرنے کا سوچ رہی ہے۔ ایک نجی ٹی وی کو انٹرویو میں حافظ سعید نے کہا کہ نواز شریف کی انر جی بحران پر قابو پانے کیلئے کاوشیں قابل تحسین ہیں۔ نئی حکومت کو آئے ہوئے زیادہ وقت نہیں ہوا، اسے موقع دیا جانا چاہئے۔ انہوں نے کہا کہ میں بھارت کے ساتھ تعلقات بڑھانے کیلئے نواز شریف کے نظریے کا مخالف نہیں، میں یہ نہیں کہتا کہ بھارت کے ساتھ ہر قسم کے تعلقات ختم کر لئے جائیں بلکہ میرا یہ کہنا ہے کہ بنیادی مسائل حل کئے بغیر تعلقات کو فروغ نہ دیا جائے‘ ہم بھارت کے ساتھ صرف لڑائی جھگڑا نہیں چاہتے بلکہ تعلقات بھی چاہتے ہیں۔ ضرورت اس امر کی ہے کہ بھارت پاکستان کے بارے میں اپنی پالیسی درست کرے۔ بھارت نے آج تک پاکستان کو تسلیم ہی نہیں کیا۔ پاکستان میں دہشت گردی کے واقعات اس لئے بڑھ رہے ہیں کیونکہ امریکہ نے پاکستان میں بیٹھ کر افغانستان کی جنگ لڑی، پاکستان کے ان حالات سے فائدہ اٹھا کر بھارت نے بلو چستان میں علیحدگی پسند تحریک کھڑی کر دی جس سے حالات مزید کشیدہ ہوگئے۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان میں اس وقت انرجی بحران پیدا ہونے کا اصل ذمہ دار بھی بھارت ہے جس کا واضح ثبوت یہ ہے کہ بھارت ہمارے بجلی گھروں کو پانی کی ترسیل روکنے کیلئے صرف کشمیر میں 62ڈیم بنا چکا ہے۔ اس ہر سال آنیوالے سیلاب کے پیچھے بھی بھارت کیونکہ وہ اپنا سارا اضافی پانی ڈیموں میں ذخیرہ کرتا ہے اور جب پانی قابو سے باہر ہو جاتاہے تو وہ ہماری طرف چھو ڑ دیتا ہے جس سے پورے پاکستان میں سیلاب آ جاتا ہے۔ انہوںنے کہا کہ بھارت دونوں ممالک میں باہمی تعلقات کو فروغ دینے کی بجائے پروپیگنڈا کی سیاست کر رہا ہے۔ آئے دن ہم پر الزام لگائے جاتے ہیں لیکن انکا کوئی سر پیر ہی نہیں ہوتا۔ ہمارے اوپر ممبئی حملوں کے الزامات لگائے گئے جس کا آج تک ان کے پاس کوئی ثبوت ہے ہی نہیں۔ موجودہ حکومت زرداری حکومت کی ڈرون پالیسی کے اسی تسلسل کو جاری رکھے ہوئے ہے۔ ہم ڈرون گرا سکتے ہیں صرف ہمارے پالیسی سازوں نے ہمارے ملک کو معذور و مفلوج کر کے رکھ دیا ہے۔ اب وقت آگیا ہے کہ نواز شریف آگے بڑھ کر جرا¿ت مندانہ فیصلے کر یں جو کہ ہر قسم کے بیرونی دباﺅ سے آزاد ہوں۔ نواز شریف کو چاہئے کہ اسلام آباد میں 60اسلامی مما لک کے سربراہان کو مدعو کریں اور ان کے ساتھ مل کر عالم اسلام کے مشترکہ مفاد کیلئے فیصلے کریں۔ اگر یورپی یونین بنائی جا سکتی ہے تو اسلامی یونین کیوں نہیں بنائی جا سکتی۔ اب وقت آگیا ہے کہ ہم اپنی منڈیا ں بنائیں، اپنا سکہ بنائیں اور انگریزوں پر مسلط ہو جائیں۔ ایک سوال کے جواب میں انہو ں نے کہا کہ حکومت پنجاب کی جانب سے میرے ادارے کو سالانہ فنڈز مہیا کرنے کی خبریں بالکل بے بنیا د ہیں۔ میرے تعلیمی اداروں کو حکومت پنجاب ایک دھیلا بھی نہیں دیتی بلکہ وہ رقم ان افسران کی جیب میں جاتی ہے جن کو میرے اداروں کی رپورٹیں بنانے پر لگایا گیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ شاہ رخ خان مسلمان ہو کر بھارت میں جس جرا¿ت سے زندگی بسر کر رہے ہیں اس پر میں ان کو سلام پیش کرتا ہوں۔ لاہور (خصوصی نامہ نگار) امیر جماعةالدعوة پاکستان پروفیسر حافظ محمد سعید نے کہا ہے کہ ملک بھر کے مختلف علاقوں میں شدید بارشوں و سیلاب سے ہزاروں افراد متاثر ہو ئے ہیں۔ سیلاب متاثرہ بھائیوں کی مدد پوری پاکستانی قوم پر فرض ہے۔ جماعةالدعوة کے سینکڑوں رضاکار متاثرہ علاقوں میں امدادی سرگرمیاں سرانجام دے رہے ہیں۔مخیر حضرات متاثرین کی دل کھول کر مدد کریں تاکہ متاثرین کے سحرو افطار کا بندوبست اور متاثرہ بھائیوںکے معمولات زندگی بحال کرنے میں مدد دی جاسکے۔اتوار کوپنجاب،خیبر پی کے، بلوچستان اور سندھ کے ذمہ داران کو ہدایات جاری کرتے ہوئے انہوںنے کہاکہ بارشوں و سیلاب سے متاثرہ علاقوں میں امدادی سرگرمیوں کو اور زیادہ منظم کیا جائے۔ لوگوں کے جان و مال کے تحفظ کے لئے امدادی رضاکارریلیف سرگرمیوں میں بڑھ چڑھ کر حصہ لیںاور انہیں بروقت ہر قسم کی بنیادی ضروریات زندگی مہیا کرنے کی کوششیں کی جائیںاور اس حوالہ سے کسی قسم کی غفلت کا مظاہرہ نہ کیا جائے۔ انہوں نے کہا کہ طوفانی بار شوں اور بعض مقامات پر پانی کے تیز بہاﺅکی وجہ سے ندی نالوں کے ٹوٹنے سے ہزاروں ایکڑ زمین پر کھڑی فصلیں تباہ ہوئی ہیں جن سے کسانوں اور زمینداروں کا شدید نقصان ہوا ہے حکومت پاکستان کو چاہیے کہ وہ متاثرین کی ہر ممکن مدد کرے اور کسانوں و زمینداروں کی فصلیں بچانے میں بھرپور کردار ادا کریں۔ حافظ محمد سعید نے کہاکہ مخیر حضرات رمضان المبارک کے ماہ مقدس میں طوفانی بارشوں و سیلاب سے متاثرہ افراد اور غرباءو یتامیٰ کی جس قدر ممکن ہو سکے مدد کریں اور صدقہ فطر بھی وقت پر ادا کیا جائے تاکہ مستحقین کی بروقت مدد ہو سکے۔انہوںنے کہاکہ رمضان المبارک رحمت و برکتوں والا مہینہ ہے نبی کریم اس ماہ مبارک میں صدقہ و خیرات کو بہت اہمیت دیتے تھے۔ آج ہمیں بھی چاہیے کہ ہم غرباءو مساکین ، مستحقین اور سیلا ب متاثرین کی دل کھول کر مدد کریں ، ان کے سحرو افطار کا انتظام کریں اور انہیں عید الفطر کی خوشیوں میں شریک کرنے کی کوشش کریں۔ بارشوں و سیلاب سے متاثرہ افراد کی مدد کیلئے پوری قوم کو آگے بڑھ چڑھ کر کردار ادا کرنا چاہیے۔