مولانا یعقوب قادری کے قاتل گرفتار نہ ہوئے تو عید کے بعد تحریک چلائیں گے: سنی اتحاد کونسل

لاہور (خصوصی نامہ نگار) سنی اتحاد کونسل کے زیراہتمام 30اہلسنّت جماعتوں کے مشترکہ ہنگامی احتجاجی اجلاس میں مطالبہ کیا گیا ہے کہ فرقہ پرست دہشت گردوں کے ہاتھوں نواب شاہ میں شہید ہونے والے مولانا محمد یعقوب قادری کے قاتلوں کو فی الفور گرفتار کیا جائے۔ قاتل گرفتار نہ ہوئے تو عید کے بعد احتجاجی تحریک چلائی جائے گی۔ شب ِ قدر اور عیدالفطر کے اجتماعات میں مولانا محمد یعقوب قادری کی دینی خدمات کو خراج تحسین پیش کیا جائے گا اور ان کے ظالمانہ قتل کے خلاف مذمتی قراردادیں منظور کی جائیں گی اور وزیراعلیٰ سندھ کو احتجاجی خطوط ارسال کئے جائیں گے اور علماءو مشائخ کا وفد وزیراعلیٰ سندھ سے ملاقات کر کے محمد یعقوب قادری کے قاتلوں کی گرفتاری کا مطالبہ کرے گا۔ اہلسنّت جماعتوں کا مشترکہ اجلاس المرکز الاسلامی شادباغ میں چیئرمین کونسل صاحبزادہ حامد رضا کی زیرصدارت ہوا۔ اس موقع پر صاحبزادہ حامد رضا نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ حکومت فرقہ پرست دہشت گردوں کے خلاف کریک ڈاﺅن کرے۔ مولانا محمد یعقوب قادری کے قتل کے سانحہ میں کالعدم جماعتیں ملوث ہیں۔ سندھ حکومت محمد یعقوب قادری کے قاتلوں کی گرفتاری کے معاملے میں سردمہری اور مجرمانہ غفلت کا مظاہرہ کر رہی ہے۔ مفتی محمد اقبال چشتی نے کہا کہ مولانا محمد یعقوب قادری کا قتل بدترین دہشت گردی ہے۔ پیر سیّد محمد اقبال شاہ نے کہا کہ علمائے اہلسنّت کی ٹارگٹ کلنگ حکومت کی نااہلی ہے۔ انجمن طلباءاسلام کے مرکزی صدر اسد خان جدون نے کہا کہ ہم محمد یعقوب قادری کا خون رائیگاں نہیں جانے دیں گے۔