لوڈشیڈنگ، مہنگائی، بیروزگاری، چھ ماہ میں 185 افراد نے خودکشی کی

لاہور (شہزادہ خالد) بجلی و گیس کی لوڈشیڈنگ، بے روزگاری اور مہنگائی  کے ستائے 185  افراد نے  رواں برس  خودکشی کی۔  خودکشی کے یہ واقعات 2013ء کے پہلے 6 ماہ  کے دوران پیش آئے۔  اعداد و شمار کے مطابق جنوری 2013ء  میں 21 ، فروری  میں 33، مارچ میں 39، اپریل میں 27،  مئی  میں 29 اور جون میں 36 افراد نے خودکشی کی۔  اکثر واقعات میں اجتماعی  خودکشی  کی گئی جس  میں  باپ یا ماں  نے اپنے بچوں سمیت نہر میں چھلانگیں لگائیں گزشتہ  سال 355 افراد نے خودکشی جیسا انتہائی قدم اٹھایا۔ علمائے  کرام نے نوائے وقت سے  خصوصی گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ خودکشی  ہر حال میں حرام ہے۔  خودکشی  کرنے والوں کا خون  حکمرانوں کے سر ہے۔  حکمرانوں  کی ذمہ داری ہے کہ وہ شہریوں  کو انصاف فراہم کریں۔  عوامی حلقوں  کا کہنا ہے کہ خودکشی  کے واقعات  میں اہم کردار لوڈشیڈنگ کا ہے۔  کاروبار ختم، نیند پوری نہ ہونے سے لوگ  ذہنی مریض  بنتے جا رہے ہیں۔