بجلی کے معاملا ت سے واپڈا کا کوئی تعلق ہے نہ اسے شارٹ سرکٹ سے نقصانات کا ذمہ دار قرار دیا جاسکتا ہے:ترجمان

لاہور(پ ر) واپڈا ترجمان نے 3 جون کو ’’شیخوپورہ میں شارٹ سرکٹ سے کپڑے کی دکانیں جل کر خاکستر، تاجروں کا واپڈا کے خلاف مظاہرہ‘‘ کے عنوان سے شائع ہونے والی خبر کی وضاحت کرتے ہوئے کہا ہے کہ 2007ء میں واپڈا کی تنظیم نو کے بعد بجلی کے معاملات بشمول صارفین کو بجلی کی فراہمی اور مذکورہ مقصد کے لئے کھمبوں اور تاروں کی تنصیب سے واپڈا کا کوئی تعلق نہیں ہے۔ لہٰذا شارٹ سرکٹ اور اس کے نتیجے میں ہونے والے نقصانات کے حوالے سے واپڈا کو موردِ الزام ٹھہرانا حقیقت کے برعکس ہے۔ ترجمان نے واضح کیا کہ پاور سیکٹر اصلاحات اور 2007ء میں پاور ونگ کی تنظیمِ نو کے بعد واپڈا کا دائرہ کار صرف پانی اور بجلی کے نئے منصوبوں کی تعمیر اور موجودہ پن بجلی گھروں کے آپریشن اور دیکھ بھال تک محدود ہے، جبکہ بجلی کے تمام معاملات جنریشن، ٹرانسمیشن اور ڈسٹری بیوشن کمپنیوں کی ذمہ داری ہے اور یہ کمپنیاں واپڈا کے ماتحت نہیں ہیں۔