پنجاب پولیس کی نئی فورس کیلئے 500 سی سی مہنگی ایڈونچر موٹر سائیکلیں خریدنے کا فیصلہ

لاہور (سید شعیب الدین سے) پنجاب پولیس نے مہنگی ایڈونچر موٹر سائیکلیں خریدنے کی اپنی خواہش کی تکمیل کرلی، وزیراعلیٰ پنجاب کی سربراہی میں اعلیٰ سطح اجلاس میں پنجاب پولیس کی نئی ڈولفن فورس کیلئے ترک پولیس افسران کی ’’سفارش‘‘ کے بعد مہنگی 500 سی سی ایڈونچر موٹرسائیکل خریدنے کا فیصلہ کیا گیا، جاپان میں بنی یہ موٹرسائیکل 18لاکھ روپے میں خریدی جائے گی اور 300 موٹرسائیکلوں کی پہلی کھیپ کیلئے فیصلہ کیا گیا ہے جبکہ ڈولفن فورس کیلئے بعد ازاں مزید 1600 موٹرسائیکلیں خریدی جانی ہیں، پنجاب پولیس نے ترک پولیس افسران کی ’’سفارش‘‘ سے 500 سی سی کی جو موٹرسائیکلیں خریدنے کا فیصلہ کروایا ہے وزیراعلیٰ پنجاب کی بنائی کیبنٹ کمیٹی نے اس موٹرسائیکل کے خریدنے کی مخالفت کی تھی اور انہوں نے ایک دوسری کمپنی کی 250 سی سی موٹرسائیکلیں خریدنے کے حق میں رائے دی تھی کیونکہ یہ موٹرسائیکل تیز چلانا آسان ہے اور 250 سی سی موٹرسائیکل نہ صرف سستی اور ساڑھے سات لاکھ میں دستیاب ہے بلکہ رواں مالی سال کے دوران پاکستان میں یہ250 سی سی موٹرسائیکل بننے بھی لگے گی مگر پولیس کے اعلیٰ ترین افسر بضد رہے کہ صرف 500 سی سی موٹرسائیکل لی جائے گی اور وہ بھی اسی کمپنی کی جس سے وہ خریدنا چاہتے ہیں، پولیس افسران جس کمپنی کی 500 سی سی موٹرسائیکل 18لاکھ روپے میں خرید رہے ہیں اس کے مقابلے میں 250 سی سی موٹرسائیکل بنانے والی دوسری کمپنی کی 650 سی سی موٹرسائیکل 15لاکھ میں دستیاب ہے مگر 18لاکھ والی موٹرسائیکل کو 3لاکھ روپے مہنگی ہونے کے باوجود ترجیح دی گئی ہے، پولیس کے کچھ سینئر افسران جو اس ’’ڈیل‘‘ کا حصہ نہیں ہیں ان کا کہنا ہے کہ لاہور کی ٹریفک میں 500 اور 650 سی سی موٹرسائیکل چلانا مشکل کام ہے، 250 سی سی موٹرسائیکل بے حد مناسب چوائس تھی۔