مصطفی کانجو نے 99ء میں جسٹس خواجہ محمد شریف کے بیٹے کو بھی شدید زخمی کیا تھا وزیر مملکت باپ نے عدالت میں معافی مانگی

لاہور (نیٹ نیوز) لاہور کے علاقے کیولری گرائونڈ میں سابق وزیر مملکت صدیق کانجو کے بیٹے کی فائرنگ سے بیوہ ماں کا سہارا اور دو بہنوں کا اکلوتا بھائی زین جان سے چلا گیا۔ اس سے قبل 1999ء میں صدیق کانجو کے بیٹے نے اس وقت کے جج لاہور ہائیکورٹ خواجہ شریف کے بیٹے سے ڈیفنس میں معمولی بات پر جھگڑا کیا اور پھر حملہ کر کے اسے شدید زخمی کر دیا اور فرار ہو گیا۔ اس واقعہ کا اس وقت کے چیف جسٹس لاہور ہائیکورٹ نے ازخود نوٹس لیا جس کے بعد ملزم کی گرفتاری عمل میں لائی گئی۔ عدالتی حکم پر اس وقت کے وزیر مملکت برائے امور خارجہ صدیق خان کانجو عدالت میں پیش ہوئے اور اپنے بیٹے کے کرتوتوں کی تحریری معافی مانگی جسے عدالت نے منظور کر لیا جس کے بعد ملزم کی رہائی عمل میں آئی۔