مختلف شہروں میں بارش، ژالہ باری، چھتیں ، آسمانی بجلی ، سائن بورڈ گرنے سے ماں 2 بچوں سمیت جاں بحق

لاہور (نامہ نگاران+ سپورٹس رپورٹر+ آئی این پی) لاہور سمیت مختلف شہروں میں بارش، ژالہ باری، چھتیں، آسمانی بجلی گرنے سے ماں 2 بچوں سمیت 10 افراد جاں بحق ہوگئے۔ سوہاوہ کے علاقے ڈومیلی کے نواحی گاؤں بوہڑیاں میں مکان کی چھت گرنے سے گھر میں موجود 25 سالہ محنت کش اشفاق کی بیوی میمونہ، 7 سالہ بیٹا حفیظ حسین اور 3 سالہ بیٹی عنبر موقع پر ہی دم توڑ گئے۔ میانوالی، پپلاں، مکڑوال، کمرمشانی، چک امرو میں فصلوں کو نقصان، علاوہ ازیں وزیراعلیٰ شہباز شریف نے جہلم دینہ کے علاقے ڈومیلی میں گھر کی چھت گرنے سے ماں اور 2 بچوں کے جاں بحق ہونے پر گہرے دکھ اور افسوس کا اظہار کیا ہے۔ سکھر میں آندھی سے گوٹھ میں بجلی کے 4 کھمبے گر گئے ایک کچے مکان کی چھت گرنے سے ماں بیٹی زخمی ہو گئیں۔ حادثات میں زخمی 12 افراد کو ہسپتال داخل کرا دیا گیا ہے۔ علاوہ ازیں نصیر آباد سے نوائے وقت رپورٹ کے مطابق بولان کے علاقہ پالاناڑہ میں آسمانی بجلی گرنے سے 2 افراد جاں بحق ہوگئے۔ ملک میں داخل ہونے والی مغربی ہواؤں سے ہونے والی بارشوں سے ملک کے بالائی اور سنٹرل حصے میں موسم خوشگوار ہو گیا ہے جبکہ گندم کی کاشت کے علاقوں میں آج جمعہ کو مزید بارش نے کسانوں کے چہرے کھلا دیئے ہیں۔ گذشتہ روز ملک کے مختلف حصوں اسلام آباد، راولپنڈی، گوجرانوالہ وغیرہ میں کہیں کہیں جبکہ فیصل آباد، لاہور، ڈی جی خان میں چند مقامات پر تیز ہوائوں اور گرج چمک کیساتھ بارش ہوئی۔ سب سے زیادہ بارش اسلام آباد میں (سیدپور 48، گولڑہ 39، زیرو پوائنٹ 35) ملی میٹر کالام میں06 ملی میٹر ریکارڈ کی گئی۔ محکمہ موسمیات کے مطابق 24گھنٹوں کے دوران کوئٹہ، ژوب، قلات، سبی، ڈیرہ بگٹی، نصیرآباد، موسیٰ خیل، جھل مگسی اورکوھلو، جبکہ آج (جمعہ کی صبح) کے دوران سکھر، لاڑکانہ، جیکب آباد، گھوٹکی، خیرپور، نوشیرو فیروز، اسلام آباد، راولپنڈی، گوجرانوالہ، سرگودھا، فیصل آباد، ڈی جی خان، راجن پور، رحیم یار خان، ملتان، بہاولپور، لودہراں، وہاڑی، بہاولنگر، خانیوال، ساہیوال، پاک پتن، پشاور، مالاکنڈ، سوات، بونیر، مردان، چارسدہ، نوشہرہ، صوابی، ڈی آئی خان اور ہری پور کے اضلاع، گلگت بلتستان، فاٹا اورکشمیر میں اکثر مقامات پر تیز ہوائوں اورگرج چمک کیساتھ بارش اورچند مقامات پر ژالہ باری کا امکان ہے۔ اس کے علاوہ پنجاب اور خیبر پی کے دیگر علاقوں میں بھی چندایک مقامات پربارش کا امکان ہے۔ آج صبح مالاکنڈ، راولپنڈی، گوجرانوالہ ڈویڑن اور کشمیر میں چند مقامات پر موسلا دھار بارش کا امکان ہے۔ علاوہ ازیں کرم ایجنسی سے نوائے وقت رپورٹ کے مطابق وسطی کرم کے علاقے وارث میں طوفانی بارشوں سے لینڈنگ سلائیڈنگ کی زد میں آ کر 20 مکان تباہ، 70 افراد کو ملبے سے نکال لیا، اوستہ محمد میں رائس مل کی دیوار گرنے سے 7 زخمی، جعفر آباد میں 100 گرام وزنی اولے گرنے سے کھڑی فصلیں تباہ، قلات، سبی جعفر آباد میں بارش سے متعدد علاقے زیر آب، مواصلاتی رابطہ منقطع، متعدد مکانات تباہ ہوگئے۔ شکارپور سے آئی این پی کے مطابق شکارپورکی گڑہی یاسین میں شدید طوفان اور شدید بارش کے نتیجے میں اینٹوں سے بنا ہوا سائن بورڈ گرنے سے شادی میں جانے والے5 افراد دب کر جاں بحق ہو گئے، جاں بحق ہونے والوں میں 2 بچے بھی شامل ہیں جبکہ 10 سے زائد زخمی ہو گئے، زخمیوں و لاشوں کو گڑھی یاسین ہسپتال منتقل کر دیا گیا جہاں نعشیں پوسٹ مارٹم کے بعد ورثاء کے حوالے کر دی گئیں۔ شکارپور ضلع میں اچانک تیز آندھی و طوفان اور ایک پائو وزنی گڑھے کے ساتھ بارش ہوئی جس سے شکارپور، خانپور، لکھی غلام شاہ، گڑھی یاسین میں متعدد گھر ، جبوتری گر گئے اور نظام درہم برہم ہو گیا جبکہ گڑھی یاسین شہر میں تیز بارش اور طوفان کے دوران ڈھکن ناکہ پر سپیکر سندھ اسمبلی آغا سراج درانی کیلئے اینٹوں کی بنائی گئی سائن بورڈ گرنے سے شادی میں جانے والے گائوں ریگی گڑھی یاسین کے 5 افراد نیچے دب کر جاں بحق ہو گئے جن میں چھ سالہ حنا بی بی، طالب علم حماد اللہ ابڑو، سید بابر شاہ، سی اسلام شاہ، ذیشان شامل ہیں جبکہ دیگر نواحی علاقے میں جبوترے، گھر کے کچے مکانات گرنے سے دس سے زیادہ افراد کے زخمی ہونے کی اطلاعات ہیں۔ ادھر شہروں میں بارشوں کی وجہ سے تین سے زیادہ فٹ بارش کا پانی کھڑا ہو گیا ہے۔