”شیڈول سے قبل پرائیویٹ میڈیکل کالجز میں داخلے قواعد کی خلاف ورزی ہے“

لاہور (نیوز رپورٹر) پی ایم اے پنجاب کے صدر پروفیسر ڈاکٹر اشرف نظامی، جنرل سیکرٹری ڈاکٹر ابرار اشرف علی، ڈاکٹر تنویر انور، ڈاکٹر اظہار چوہدری، ڈاکٹر شاہد ملک اور ڈاکٹر سلمان کاظمی نے پرائیویٹ میڈیکل کالجزکی طرف سے قواعد و ضوابط کی دھجیاں بکھیرتے ہوئے مالی منفعت کیلئے سرکاری میڈیکل کالجز میں داخلوں سے پہلے داخلوں پر شدید احتجاج کیا ہے اور اسے یونیورسٹی آف ہیلتھ سائنسز اور محکمہ صحت کی نااہلی اور نالائقی قرار دیا۔ انہوں نے کہا کہ قواعد و ضوابط کے تحت پرائیویٹ میڈیکل کالجز اس بات کے پابند ہیں کہ وہ سرکاری میڈیکل کالجز میں داخلوں کے بعد داخلہ کریں گے لیکن پرائیویٹ میڈیکل کالجز یونیورسٹی ہیلتھ سائنسز کی ملی بھگت سے اور محکمہ صحت کی نااہلی کی وجہ سے مالی فائدے کیلئے مجبور اور غرض مند والدین کو Exploit کر رہے ہیں اور پراسپیکٹس اور انفرادی ٹیسٹ کے نام پر کروڑوں روپے کما رہے ہیں۔ والدین اور طلبہ کا کوئی پرسان حال نہیں جو قواعد و ضوابط پر عملدرآمد نہ ہونے کی وجہ سے بلاجواز مشکلات کا سامنا کر رہے ہیں۔