قرض نادہندہ، ٹیکس چور، جعلی ڈگری والے پھر منتخب ہوئے تو ذمہ دار الیکشن کمشن ہو گا: طاہر القادری

لاہور (خصوصی نامہ نگار) عوامی تحریک کے قائد ڈاکٹر محمد طاہر القادری نے کہا ہے کہ آنے والے الیکشن اور کرپشن جڑواں بھائی اور الیکشن کمشن ان کا باپ ہے ۔ ان کے ذریعے حقیقی جمہوریت ملک میں کبھی نہیں آئے گی ۔عوام ظلم سے رہائی چاہتے ہیں تو اس سارے خاندان کو اٹھاکر باہر پھینکنا ہو گا ۔ عوام پولنگ ڈے کو نظام انتخاب کے خلاف پاکستان عوامی تحریک کے دھرنوں میں شرکت کریں، قرض نادہندگان، ٹیکس چور اور جعلی ڈگری والے پھر منتخب ہوگئے تو ذمہ دار الیکشن کمشن ہو گا۔ تبدیلی کا خواب دیکھنے والے نہ ادھر کے رہیں گے نہ ادھر کے اور11 مئی کے بعد سر پیٹیں گے۔اس دن خالص دودھ ایک طرف اور گدلا پانی دوسری طرف ہو گا۔ وہ گزشتہ روز لندن سے عوامی تحریک کے سیکرٹری جنرل خرم نواز گنڈا پور سے ٹیلی فون پر گفتگو کررہے تھے۔ انہوں نے کہا کہ 23دسمبر اور لانگ مارچ کے بعد کرپٹ طبقے کا مک مکا سامنے آگیا اور بہت کچھ جلد سامنے آ جائے گا ۔ اٹھارویں ،انیسویں اور بیسویں ترامیم کرنے والی پارلیمنٹ میں جعلی ڈگری اور دھری شہریت رکھنے والے سینکڑوں اراکین موجودہ تھے۔ قوم آئینی اور قانونی اداروں سے سوال کرتی ہے کہ کیا ان ترامیم کا وجود آئینی اورقانونی ہے؟قوم کو عدل اور انصاف مہیا کرنے والوں کے ہونٹ کیوں سل گئے؟
طاہر القادری