ہائیکورٹ بار کے تینوں صدارتی امیدواروں نے منشور کا اعلان کر دیا

لاہور(وقائع نگار خصوصی) لاہور ہائیکورٹ بار ایسوسی ایشن کے تینوں صدارتی امیدواروں نے نوجوان وکلاءکے مسائل حل کرنے،بار اور بنچ میں مضبوط تعلقات،بار کی آزادی،جدید لائبریری کے قیام اور وکلاءکےلئے میڈیکل کی سہولت و ہاﺅسنگ سکیم کو اپنے منشور کی بنیادی ترجیحات قرار دیا۔لیگل لائیرز فورم کے زیر اہتمام مباحثے میں پروفیشنل گروپ کے سید محمد شاہ،فرینڈز الائنس کے عابد ساقی اور آزاد امیدوار شفقت چوہان نے منشور پیش کرنے کے علاوہ وکلاءکے سوالوں کے جواب بھی دیئے۔سید محمد شاہ نے کہا کہ ہائی کورٹ بار کا صدر منتخب ہونے کی صورت میں وہ نوجوان وکلاءکو اکاموڈیٹ کروانے کے علاوہ فنڈز میں اضافے،میڈیکل و ہاﺅسنگ سکیم،لائبریری اور لیڈی بار روم کی توسیع،آئی ٹی لیب کا قیام اور وکلاءکے بنیادی مسائل حل کریں گے، بار کے انتخابات میں کروڑوں روپے خرچ کرنے اور کھانوں کی روایت کو ختم ہونا چاہئے۔عابد ساقی نے کہا کہ وکلاءان کو کھانے کی پارٹیوں کے بغیر ووٹ دیتے ہیں۔ شفقت چوہان نے کہا کہ دونوں امیدوار گروپوں کے ہیں مگر وہ آزاد ہیں، صدر کے دفتر یا کسی بڑی شخصیت کے گھر بیٹھ کر مہم چلانے کی بجائے ان کا الیکشن عام وکیل لڑے گا اگر وہ صدر بار منتخب ہوئے تو بار کسی گروپ یا سیاسی جماعت کے تابع نہیں ہو گی۔ شفقت محمود نے کہا کہ وکلاءکھانے کی پارٹیاں ہونی چاہئیں البتہ وہ راتوں کو پارٹیاں نہیں کرتے۔