فضائیہ کے 14 طیارے حادثات کی نذر، ایک انکوائری بھی سامنے نہیں آئی

اسلام آباد (دی نیشن رپورٹ) ایک سال سے زائد عرصہ میں طیاروں کے حادثات، آگ بھڑک اٹھنے یا ہنگامی لینڈنگ میں پاک فضائیہ کے14 طیارے تباہ ہوئے یا انہیں نقصان پہنچا لیکن ان واقعات میں سے ایک کی بھی انکوائری رپورٹ ابھی تک سامنے نہیں آئی۔ دستیاب اعداد و شمار کے مطابق 10 سے زائد پی اے ایف افسر جنمیں ایک ائرکموڈور 6 سکوارڈن لیڈرز اور دو فلائٹ لیفٹیننٹ شامل ہیں ان واقعات میں جاں بحق ہوئے یہ حادثات گزشتہ سال اکتوبر سے ماہ نومبر 2012 ء تک کے ہیں۔ طیارے کے ہر حادثہ کے بعد یک سطری بیان جاری کیا جاتا رہا ہے جس میں کہا جاتا ہے کہ حادثہ کی وجہ کا تعین کرنے کیلئے انکوائری کا حکم دیدیا گیا ہے لیکن ان انکوائریوں کی تفصیلات کبھی عوام کے سامنے نہیں لائی گئیں۔ اس کے علاوہ کسی قسم کی متعلقہ تفصیلات میڈیا کو بھی فراہم نہیں کی گئیں۔ پی اے ایف کے ذرائع کا کہنا ہے کہ اس قسم کی تحقیقات کے نتائج منظر عام پر لاتے جاتے ہیں نہ میڈیا سے شیئر کئے جاتے ہیں۔ یہ اندرونی تحقیقات ہوتی ہے ان کی نوعیت حساس ہوتی ہے صرف پاک فضائیہ کی اعلی قیادت کو متعلقہ تفصیلات کا علم ہوتا ہے۔