توہین رسالت ایکٹ ختم کرنے کی امریکی سازش ناکام ہو گی: تحریک حرمت رسول

لاہور (خصوصی نامہ نگار) تحریک حرمت رسول کے رہنماﺅں نے امریکی محکمہ خارجہ کی طرف سے جاری رپورٹ جس میںکہا گیا ہے کہ”ہمیں پاکستان میں توہین رسالت کے مقدمات میں سزائے موت پر تشویش ہے“ پر شدید رد عمل ظاہر کرتے ہوئے کہا ہے کہ امریکیوں کو پاکستان میں توہین رسالت قانون سے تکلیف صرف اس لئے ہے کہ وہ چاہتے ہیں کہ صلیبی و یہودی (نعوذ باللہ)نبی اکرم کی شان اقدس میں گستاخیاں کرتے پھریں کوئی انہیں پوچھنے والا نہ ہو لیکن کلمہ طیبہ کے نام پر حاصل کئے گئے ملک پاکستان کے غیور عوام امریکہ و یورپ کی یہ مذموم سازشیں ان شاءاللہ کسی صورت کامیاب نہیں ہونے دیں گے۔ ان خیالات کا اظہار تحریک حرمت رسول پاکستان کے کنوینئر مولانا امیر حمزہ، حافظ محمد عاکف سعید، حافظ عبدالغفار روپڑی، ڈاکٹر فرید احمد پراچہ، قاری زوار بہادر، ابتسام الہی ظہیر، قاری محمد یعقوب شیخ، مولانا محمد امجد خان، مولانا محمد شفیع جوش، مولانا سیف الدین، قاری محمد یوسف احرار، مولانا محمد حسنین صدیقی، حافظ خالد ولید، مولانا محمد عاصم مخدوم و دیگر نے اپنے ایک مشترکہ بیان میں کیا۔ انہوں نے کہا کہ امریکہ کا حالیہ بیان بھی توہین رسالت کے زمرے میں آتا ہے۔ حکومت پاکستان کواس کا فی الفور نوٹس لینا چاہئے۔ مسلمان سب کچھ برداشت کر سکتا ہے لیکن نبی مکرم کی شان رسالت میں گستاخی کسی صورت برداشت نہیں کر سکتا۔